صنفی امتیاز کے بغیر کسی کو حق دینا ہی اصل انسانیت ہے،پروین سرور

    صنفی امتیاز کے بغیر کسی کو حق دینا ہی اصل انسانیت ہے،پروین سرور

  



لاہور (لیڈی رپورٹر)بیگم گورنر پروین سرور نے کہا ہے کہ یکساں بنیادی حقوق کی پاسداری کا مقصد عورت کی عزت نفس اور مرد کی جرأت کو متزلزل کرنا نہیں۔انہوں نے کہا کہ صنفی امتیاز کے بغیر کسی کو حق دینا ہی اصل انسانیت ہے۔ وہ پنجاب یونیورسٹی میں خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے ’آواز، پسند اورتحفظ ‘کے موضوع پرالرازی ہال میں منعقدہ خصوصی ڈائیلاگ سے خطاب کر رہی تھیں۔ اس موقع پر ڈین فیکلٹی آف بیہوریل اینڈ سوشل سائنسز پروفیسر ڈاکٹر عنبرین جاوید،سربراہ شعبہ جینڈر سٹڈیز ڈاکٹر راعنا ملک، ایڈوائزر فار ایوا اینڈ گورننس پنجاب مس نبیلہ ملک،تجزیہ نگار سلمان عابد، این جی اوز سے نمائندگان، فیکلٹی ممبران اور طلباؤ طالبات نے بڑی تعدا د میں شرکت کی۔اپنے خطاب میں بیگم پروین سرور نے کہا کہ خواتین کے حقوق سے متعلق شہروں سے زیادہ دیہی آبادی کوآگاہی فراہم کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ حقوق نسواں وہی حقوق ہیں جو دین اسلام نے دیئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کو درپیش مسائل دور کرنے اور معیار زندگی بہتر کرنے کیلئے تعلیم بہت ضروری ہے۔ انہوں نے لڑکیوں کو نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ گھر سے باہر جاتے ہوئے والدین کو بتا کر جائیں اور تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے اکیلی جانے کی بجائے گروپس میں جائیں۔

، ٹیکسی وغیرہ پر سفر کرتے ہوئے گاڑی کا نمبر گھر والوں کو میسج کریں۔ ڈین فیکلٹی آف بہیوریل اینڈ سوشل سائنسز پروفیسر ڈاکٹر عنبرین جاوید نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی میں خواتین کار، موٹر سائیکل اور سکوٹی بغیر کسی ڈر اور خوف کے چلاتی ہیں۔ انہوں نے خواتین کو ڈگریاں حاصل کرنے کے بعد عملی میدان میں کام کرنے پر زور دیا۔نبیلہ ملک، سلمان عابد و دیگر پینلسٹ نے کہا کہ عورتوں کی حقوق کیلئے جدوجہد کی تاریخ بہت پرانی ہے، ماضی میں عورتوں نے تعلیم اورحق رائے دہی کیلئے تحاریک چلائیں اور آج بھی اپنے حقوق کے لئے آواز بلند کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو درپیش مسائل کے سدباب کیلئے مر د اور عورت کو مل کر کام کرنے کے ساتھ ایک دوسرے کے حقوق کا احترام کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ صنفی فرق کو کم کرنے کیلئے نئے بیانئے اور رویوں میں تبدیلی وقت کی ضرورت ہے۔

پروین سرور

مزید : میٹروپولیٹن 1