بارش کے باعث عدالتی امور متاثر،پانی جمع ہونے سے سائلین کو مشکلات

بارش کے باعث عدالتی امور متاثر،پانی جمع ہونے سے سائلین کو مشکلات

  



لاہور(نامہ نگار)صوبائی دارالحکومت میں بارش کا پانی جمع ہونے سے سائلین اور وکلا مشکلات کا شکار جبکہ بارش کی وجہ سے عدالتوں میں بجلی بند ہونے سے عدالتی کام بھی تعطل کا شکار رہے،متعدد عدالتوں میں عملہ موبائل کی روشنی میں کام نمٹانے پر مجبور رہا۔تفصیلات کے مطابق بارش کے باعث سیشن کورٹ،ماڈل ٹاؤن،ضلع کچہری،کینٹ کچہری سمیت دیگر ماتحت عدالتوں میں بارش سے عدالتوں کے احاطوں میں جمع ہوگیاجس سے سائلین کوپریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

، بارش کے باعث ماتحت عدالتوں میں وقفے وقفے سے بجلی کی آنکھ مچولی بھی جاررہی،جس سے عدالتیں تاریکی میں ڈوبی رہیں اورعدالتی کام تعطل کا شکار ہوا متعدد کیسوں میں عدالتوں کی جانب سے سائلین کو اگلی تاریخیں دے دی گئیں،اس حوالے سے عدالتوں میں آنے والے نیامت، شرافت،ناصر بیگ، علی اختر،بابا قدوس نے کہا کہ حکام بالا کو چاہیے کہ پانی کے نقاص اور بارش کے سبب بجلی کی لوڈشیڈنگ کے دوران حکام کومتبادل انتظامات کرنے چاہیں،اس حوالے سے وکلاء میاں داؤ، مدثر چودھری،مجتبیٰ چودھری اورمرزاحسیب اسامہ نے نمائندہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کوئی شبہ نہیں کہ بجلی بند ہونے کے بعدعدالتی عملہ،وکلاء و دیگر سٹاف کو اکثر اوقات شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑتا ہے جبکہ بارش کے سبب بھی جگہ جگہ پانی کھرا ہوجاتاہے جس سے سائلین اوروکلاء کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتاہے،متعدد بار ارباب اختیار کو اس بابت بتایا گیا ہے لیکن ان کی جانب سے ٹھوس انتظامات نہیں کئے جاتے ہیں،انہوں نے حکام بالا سے اپیل کی ہے کہ پانی کی بہتر نکاسی کے لئے اقدامات کئے جائیں۔

مزید : علاقائی