سمت پٹیل کی تباہ کن باؤلنگ، محمد حفیظ کی ذمہ دارانہ بیٹنگ، لاہور قلندرز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو ٹورنامنٹ میں دوسری شکست دیدی

سمت پٹیل کی تباہ کن باؤلنگ، محمد حفیظ کی ذمہ دارانہ بیٹنگ، لاہور قلندرز نے ...
سمت پٹیل کی تباہ کن باؤلنگ، محمد حفیظ کی ذمہ دارانہ بیٹنگ، لاہور قلندرز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو ٹورنامنٹ میں دوسری شکست دیدی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے 21 ویں میچ میں لاہور قلندرز نے باﺅلرز کی تباہ کن کارکردگی کی بدولت کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 8  وکٹوں سے شکست دے کر ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل تک رسائی کی امیدیں برقرار رکھی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قذافی سٹیڈیم لاہور میں کھیلے گئے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے 98 رنز کے تعاقب میں لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر اور فخر زمان نے اننگز کا آغاز کیا تو فخر زمان نے 13 گیندوں پر 1 چھکے اور 3 چوکوں کی مدد سے 20 رنز بنا کر جارحانہ عزائم کا اظہار کر دیا تاہم تیسرے اوور کی چوتھی گیند پر محمد نواز کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئے۔ کپتان سہیل اختر بھی خاطر خواہ کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے اور 32 کے مجموعی سکور پر صرف 5 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے جس کے بعد محمد حفیظ اور بین ڈنک نے عمدہ بیٹنگ کرتے ہوئے بارہویں اوور میں اپنی ٹیم کو جیت دلا دی۔ محمد حفیظ نے 32 گیندوں پر 1 چھکے اور 4 چوکوں کی مدد سے 39 رنز بنائے جبکہ بین ڈنک نے 21 گیندوں پر 1 چھکے اور 3 چوکوں کی مدد سے 30 رنز کی اننگز کھیلی۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے محمد نواز ہی سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 3 اوورز میں 9 رنز کے عوض 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور ان کے علاوہ کوئی بھی باﺅلر وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکا۔

قبل ازیں لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے ٹاس جیت کر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تو پوری ٹیم مقررہ 20 اوورز میں 98 رنز بنا سکی جو رواں سیزن میں کسی بھی ٹیم کی جانب سے بنایا گیا سب سے کم سکور ہے جبکہ 8 کھلاڑی دوہرا ہندسہ عبور کرنے میں بھی کامیاب نہیں ہو سکے۔ اوپننگ جوڑی جیسن روئے اور شین واٹسن نے اننگز کا آغاز کیا تو شاہین شاہ آفریدی نے پہلے ہی اوور میں شین واٹسن کو ایل بی ڈبلیو کر کے لاہور قلندرز کو پہلی کامیابی دلا دی۔ احمد شہزاد نے شاہین آفریدی کو 2 چوکے لگا کر جارحانہ عزائم کا اظہار کیا تاہم وہ بھی 9 رنز بنا کر شاہین آفریدی کی گیند پر سمت پٹیل کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔

کپتان سرفراز احمد بھی کریز پر زیادہ دیر ٹھہرنے میں کامیاب نہ ہو سکے اور صرف 1 سکور بنا کر سمت پٹیل کی گیند پر بین ڈنک کا شکار ہو گئے۔ سمت پٹیل نے عمدہ باﺅلنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے خطرناک بلے باز جیسن روئے کو بھی 21 کے مجموعی سکور پر کلین بولڈ کر دیا، انہوں نے 13 گیندوں پر 6 رنز بنائے۔ مجموعی سکور میں بغیر کسی اضافے کے ہی نوجوان بلے باز اعظم خان بھی سمت پٹیل کی گیند پر بین ڈنک کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔

بین کٹنگ بھی وکٹوں کے بہتے دریا میں ڈوب گئے اور بغیر کوئی سکور بنائے سمت پٹیل کی گیند پر شاہین آفریدی کے ہاتھوں کیچ ہوئے۔ محمد نواز اور سہیل خان نے ساتویں وکٹ کی شراکت میں 29 رنز جوڑے کر ٹیم کی نصف سنچری تو مکمل کر دی مگر اس موقع پر محمد نواز فرزان راجہ کو شاٹ لگانے کی کوشش میں دلبر حسین کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ فواد احمد نے 8 گیندوں پر ایک چوکے کی مدد سے 4 رنز بنائے مگر 58 کے مجموعی سکور پر راجہ فرزان کی گیند پر ڈین ویلاس نے انہیں سٹمپ آﺅٹ کر دیا۔ سہیل خان نے 35 گیندوں پر 2 چھکوں اور 2 چوکوں کی مدد سے 32 رنز بنا کر اپنی ٹیم کی ڈوبتی کشتی کو سہارا دینے کی کوشش کی مگر 93 کے مجموعی سکور پر سلمان ارشاد کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئے۔ زاہد محمود نے میچ کی صورتحال کے مطابق سست رفتار بیٹنگ کرتے ہوئے 19 گیندوں پر 19 رنز جوڑے اور ناٹ آﺅٹ رہے۔

لاہور قلندرز کی جانب سے سب سے سمت پٹیل سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 4 اوورز میں 5 رنز کے عوض 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔ شاہین شاہ آفریدی اور راجہ فرزان نے 2,2 وکٹیں حاصل کیں جبکہ سلمان ارشاد نے ایک کھلاڑی کو آﺅٹ کیا۔

واضح رہے کہ میچ کیلئے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی قیادت سرفراز احمد نے کی جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں احمد شہزاد، محمد نواز، شین واٹسن، جیسن روئے، زاہد محمود، بین کٹنگ، محمد اعظم خان، محمد حسنین، فواد احمد اور سہیل خان شامل تھے۔

لاہور قلندرز کی قیادت سہیل اختر نے کی جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں فخر زمان، محمد حفیظ، بین ڈنک، ڈین ویلاس، ڈیوڈ ویزے، سمت پٹیل، شاہین شاہ آفریدی، سلمان ارشاد، فرزان راجہ اور دلبر حسین شامل تھے۔

مزید : کھیل /PSL /PSL News Update