شوگر ملوں کی طرف سے بیچی گئی ڈیڑھ لاکھ میٹرک ٹن چینی کا سراغ لگانے کیلئے ایف آئی اے نے بڑا قدم اٹھا لیا

شوگر ملوں کی طرف سے بیچی گئی ڈیڑھ لاکھ میٹرک ٹن چینی کا سراغ لگانے کیلئے ایف ...
شوگر ملوں کی طرف سے بیچی گئی ڈیڑھ لاکھ میٹرک ٹن چینی کا سراغ لگانے کیلئے ایف آئی اے نے بڑا قدم اٹھا لیا

  



لاہور(ڈیلی  پاکستان آن لائن) ایف آئی اے نے نے تحقیقات کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے چینی فروخت کرنے والے ڈیلرز کو بھی شامل کر لیا،شوگر ملوں کی طرف سے بیچی گئی ڈیڑھ لاکھ میٹرک ٹن چینی کا سراغ لگانے کیلئے تحقیقات کا دائرہ وسیع کیا گیا ہے۔

نجی   ٹی  وی کےذرائع کے مطابق رواں سال کرشنگ سیزن کے دوران پنجاب کی ملوں نے 8 لاکھ 53ہزارچینی فروخت کی، گزشتہ سال اسی دورانئے میں 7 لاکھ میٹرک ٹن چینی فروخت کی گئی،ایف آئی اے یہ تحقیقات کر رہی ہے کہ1 لاکھ 53 ہزارمیٹرک ٹن اضافی چینی کس کو فروخت کی گئی؟ایف آئی اے یہ سراغ لگانے کی کوشش کر رہی ہے کہ چینی کس نے فروخت کی اور کس نے خریدی؟۔اس سلسلہ میں ایف آئی اے نے تحقیقات کا  دائرہ وسیع   کرتے ہوئے لاہور کی  اکبری منڈی سمیت دیگربڑے شہروں کےڈیلرز کو بلالیاہےاوراُن سے چینی کی خریداری اور فروخت کی تفصیلات طلب کر لی گئی ہیں۔دوسری  طرف  طلب  کئے جانے  والے ڈیلروں کا کہنا ہے کہ چینی کی خریدوفروخت کا ریکارڈ نہیں ہے، ایف آئی اے بڑے لوگوں پر ہاتھ ڈالے، ہم پرچون میں فروخت کرنے والے منافع خور نہیں ہیں،چینی کی فروخت کا زیادہ تر کاروبار کیش میں ہوتا ہے اس لئے ریکارڈ نہیں رکھا جاتا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور