رواں مالی سال ؛ نجی شعبہ نے 130ارب روپے کے اضافی قرضے لئے

رواں مالی سال ؛ نجی شعبہ نے 130ارب روپے کے اضافی قرضے لئے

 لاہور ( کامرس رپورٹر)گزشتہ سال کے مقابلہ میں جاری مالی سال کے دوران نجی شعبہ نے 130ارب روپے کے اضافی قرضے حاصل کیے۔ رواں مالی سال 2015-16ء میں پہلے 6 ماہ کے دوران نجی شعبہ نے بینکوں اور مالیاتی اداروں سے 352.9ارب روپے کے قرضے حاصل کیے جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران نجی شعبہ کو جاری کردہ قرضوں کا حجم 222.3ارب روپے ریکارڈ کیا گیا تھا۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال میں جولائی تا دسمبر کے دوران بینکوں کی جانبسے نجی شعبہ کو 130.6 ارب روپے کے زائد قرضہ جات جاری کئے گئے ہیں ۔ رپورٹ کے مطابق ٹیسکٹائلز ، فرٹیلائزرز ، ریٹیل ٹریڈ، کنسٹریکشن اور توانائی کے شعبہ کو جاری کئے گئے قرضوں کی شرح میں اضافہ کے باعث پرائیویٹ سیکٹر کریڈٹ (پی ایس سی) کے حجم میں اضافہ ہواہے۔ ایس بی پی کے اعدادوشمار کے مطابق مالی سال کے ابتدائی 6ماہ کے دوران نجی شعبہ کو جاری کئے گئے قرجوں کی شرح میں نمایاں اضافہ کے باوجود مالی سال کے ابتدائی دس ماہ یقینی جولائی تا اپریل کے دوران پی ایس سی کا حجم 296ارب روپے تک کم ہو گیاہے جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران 204ارب روپے کے قرضہ جات کااجراء کیاگیاتھا۔ سٹیٹ بینک نے اپنی رپورٹ میں نشاندہی کی ہے کہ نجی شعبہ کے قرضوں کے مجموعی حجم میں کمی کاسبب نجی شعبہ کی جانب سے مزید قرضوں کے حصول میں ہونے والی کمی ہے جبکہ بعض بڑے نجی اداروں کی جانب سے قرجوں کی واپسی بھی ان کے مجموعی حجم میں کمی کاسبب ہے۔ رپورٹ کے مطابق گزشتہ مالی سال کے مقالبہ میں رواں مالی سال کے دوران بڑے شعبوں بشمول ٹیکسٹائل، تعمیرات ، انفراسٹرکچر ، بجلی ، کھاد اور ریٹیل وغیرہ کی سرگرمیوں میں اضافہ ریکارڈ کیاگیاہے جو ملک میں اقتصادی سرگرمیوں کے فروغ کی عکاسی کرتاہے۔

مزید : کامرس