غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر شہری سراپا احتجاج ، مظاہروں کی دھمکی

غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر شہری سراپا احتجاج ، مظاہروں کی دھمکی

 لاہور (اسد اقبال )لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی لیسکو کی جانب سے صو بائی دارلحکو مت میں غیر اعلانیہ لو ڈ شیڈنگ سے جہاں کاروباری سر گرمیاں متاثر ہو رہی ہیں وہیں شہریوں کی مشکلات بڑھ گئی ہیں ۔شہریوں نے لیسکو افسران کوآگاہ کر دیا ہے کہ غیر اعلانیہ لو ڈشیڈنگ کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو سراپاء احتجاج بنتے ہوئے نہ صر ف احتجاجی مظاہرے کر یں گے بلکہ لیسکوہیڈ آفس اور سب ڈویژنر کا گھیراؤ کیا جائیگا ۔جس کی ذمہ دار حکو مت وقت کے سر ہو گی ۔واضح رہے کہ گر می کی شدت میں اضافے کے ساتھ لاہور کے پوش علاقوں میں چھ گھنٹے ، اندرون لاہور آٹھ سے دس گھنٹے اور مضافاتی علاقوں میں بجلی کی لو ڈشیڈنگ کا دورانیہ بارہ گھنٹے سے تجاوز کر گیا ہے ۔ گزشتہ روز روزنامہ پاکستان کی جانب سے شہر میں بجلی کی لو ڈشیڈنگ کے حوالے سے شہری لیسکو کے خلاف پھٹ پڑے ۔ مکینوں کا کہنا تھا کہ خادم اعلی پنجاب اور عوامی حکو مت کی دعویدار وفاقی حکو مت تمام تر دعوؤں اور وعدوں کے باوجود بجلی بحران کا خاتمہ کر نے میں مکمل ناکام ہو چکی ہے ۔ وقاص مغل ، وحید صدیق ، ٹیپو ، طارق چوہان ، طاہر ، علی ، بشارت ، نذیراں بی بی اور مائی خیراں نے کہا کہ بجلی کی غیر اعلانیہ طویل لو ڈشیڈنگ نے شہریوں کا جینا دوبھر کردیا ہے ۔ گرمی کی شدت نے جہاں بزرگوں اور بیماروں کو آڑے ہاتھوں لے رکھا ہے وہیں رہی سہی کسر بجلی کی طویل بندش نے نکا ل دی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ مرمت کے نام پر کئی کئی گھنٹے بجلی بند رکھی جاتی ہے جس سے گھروں میں پانی کی قلت جبکہ مساجد میں نمازیوں کو وضو کے لیے پانی دستیاب نہیں ہو تا ۔شہریوں کا کہنا تھا کہ اگر لیسکو کے چیف نے اپنی روش نہ بدلی اور غیر اعلانیہ لو ڈشیڈنگ کا خاتمہ نہ کروایا توشہر بھر میں احتجاجی مظاہروں کا آغاز کر تے ہوئے سب ڈویژنز اور لیسکو ہیڈ آفس کا گھیراؤ کر یں گے ۔ ایک سوال کے جواب میں شہریوں کا کہنا تھا کہ مو جو دہ حکو مت بھی بجلی بحران پر قابو پانے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔ شہریوں نے لیسکوچیف سے اپیل کی ہے کہ لاہور کی تمام سب ڈویژن میں اعلانیہ لو ڈشیڈنگ شیڈول پر عملدرآمد کروائیں بصورت دیگر عوام سر اپا احتجاج بن جائے گی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1