فافن نے عوامی رائے پر مبنی کرپشن سے متعلق نیا سروے جاری کر دیا،پنجاب میں سب سے زیادہ اور خیبر پختون خواہ میں کرپشن سب سے کم

فافن نے عوامی رائے پر مبنی کرپشن سے متعلق نیا سروے جاری کر دیا،پنجاب میں سب ...
فافن نے عوامی رائے پر مبنی کرپشن سے متعلق نیا سروے جاری کر دیا،پنجاب میں سب سے زیادہ اور خیبر پختون خواہ میں کرپشن سب سے کم

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)غیر سرکاری ادارے فافن نے عوام کی رائے پر مبنی کرپشن سے متعلق نیا سروے جاری کر دیاہے ،جس کے مطابق کرپشن میں پنجاب سب سے آگے ہے جبکہ خیبر پختون خواہ میں کرپشن سب سے کم ہے ۔

تفصیلات کے مطابق فافن نے سروے میں کہاہے کہ ملک کے 64فیصد عوام نے حکومتی اداروں میں مخصوص سطح پر کرپشن کی تصدیق کی ہے ،سروے کیلئے جب عوام سے رابطہ کیا گیا تو لوگوں نے شکایات کے انبار لگا دیئے ۔فافن کا کہناہے کہ انہوں نے 603مختلف مقامات پر 6ہزار سے زائد افراد کی کرپشن سے متعلق رائے لی جس میں 72فیصد مرد اور 54فیصد خواتین سرکاری اداروں میں بد عنوانی کیخلاف پھٹ پڑیں ،بلوچستان میں 82فیصد ،سندھ کے 74فیصد اور اسلام آباد کے 72فیصد عوام نے کرپشن مختلف سرکاری اداروں میں کرپشن کا رونا رویاجبکہ پنجاب کے 68فیصد ،خیبر پختون خواہ کے 52فیصد اور فاٹا کے 8فیصد لوگوں نے اداروں میں کرپشن تسلیم کی ہے ۔

فافن نے سروے کی رپورٹ میں کہاہے کہ لوگوں نے 332واقعات میں سرکاری ملازمین کو سرعام رشوت لیتے دیکھاہے ،رشوت لینے کے سب سے زیادہ 206واقعات پنجاب میں دیکھے گئے جبکہ سندھ میں 106واقعات میں سررکاری ملازمین کو رشوت لیتے ہوئے دیکھا گیاہے،بلوچستان میں 4فیصد اور خیبر پختون میں صرف ایک فیصد واقعات میں سرکاری ملازمین کو رشوت لیتے ہوئے دیکھا گیاہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں