سیکرٹری خزانہ بلوچستان مشتاق رئیسانی گرفتار ، گھر سے 70کروڑ برآمد ، مشیر خزانہ خالد لانگومستعفی، گیلانی اور پرویز اشرف کا نام ای سی ایل میں شامل

سیکرٹری خزانہ بلوچستان مشتاق رئیسانی گرفتار ، گھر سے 70کروڑ برآمد ، مشیر ...

 لاہور(سپیشل رپورٹر)قومی احتساب بیورو میگا کرپشن میں ملوث سابق وموجود اہم حکومتی شخصیات سمیت سر کا ر ی محکمو ں کے اعلی افسروں کیخلا ف کا رروا ئی کیلئے متحرک ہوگیا ۔نیب بلوچستان نے کرپشن الزامات پر سیکریٹری خزانہ مشتاق رئیسانی کوگرفتار کرکے ملزم کی نشاندہی پر گھر سے نوٹوں اور سونے کا خزانہ پکڑ لیا۔چیف سیکریٹری بلوچستان نے مشتاق رئیسانی کو معطل کردیا،نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا۔ملزم کی گرفتاری کے بعد مشیر خزانہ بلوچستان خالد لانگو نے اپنے عہدے سے استعفی دیدیا ہے۔تفصیلات کے مطابق اربوں کی کرپشن کے الزام میں گرفتار مشتاق رئیسانی کی نشاندہی پر نیب بلوچستان کی ٹیم ملزم کے گھر پہنچی تو نوٹوں سے بھرے بیگ، سونا اور اہم دستاویزات برآمد ہوئیں، جن میں غیرملکی کرنسی بھی شامل ہے۔نیب کو نوٹ گننے کیلئے تین مشینیں منگوانا پڑیں، پکڑی گئی کرنسی میں 50 کروڑ ملکی کرنسی اور 20 کروڑ مالیت کے ڈالر شامل ہیں، چار کروڑ کا سونا اور کروڑوں مالیت کی جائیداد کے کاغذات بھی ملے ہیں۔ نیب کی ٹیم کرنسی، سونے اور دستاویزات سے بھرے بیگ گاڑی میں ڈال کر لے گئی۔واضح رہے اس سے پہلے نیب نے صبح کے وقت صوبائی فنانس ڈیپارٹمنٹ پر چھاپہ مار کر مشتاق رئیسانی اور چند دیگر افسروں کو حراست میں لیا تھا، جس پر محکمہ کے ملازمین نے مظاہرہ کیا اور نیب کیخلاف نعرے بازی بھی کی۔دوسری طرف نیب کی درخواست پر پیپلز پا رٹی کے دو سابق وزرائے اعظم یوسف رضا گیلانی اورراجہ پرویز اشرف کے نا م ای سی ایل میں شامل کر د ئیے گئے ہیں۔ تفصیلا ت کے مطا بق یوسف ر ضا گیلا نی کااوگراکے سر برا ہ کی تعینا تی کیس میں اور را جہ پرویز اشرف کار ینٹل پاور پراجیکٹ کیس میں نا م ای سی ایل میں ڈا لا گیا ہے ۔علاوہ ازیں اختیارات کا غلط استعمال کرنے اور محکمے میں 500ملازمین کو غیر قانونی طریقے سے بھرتی کرنے کے الزام میں گرفتار سابق ایم ڈی پیپکو طاہر بشارت چیمہ کو14روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا گیا ہے۔

مزید : صفحہ اول