نت نئے تجربات گورنمنٹ سکولوں کو تباہ کر رہے ہیں، سجاد اکبر کاظمی

نت نئے تجربات گورنمنٹ سکولوں کو تباہ کر رہے ہیں، سجاد اکبر کاظمی

لاہور( نامہ نگار) پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکزی صدر سید سجاد اکبر کاظمی، رانا لیاقت علی، جام صادق، چوہدری محمد سرفراز، رانا انوار،راناالطاف حسین، ساجد محمود چشتی، عبدالقیوم راہی ، سعید نامدار، اسلم گھمن، افضل کیانی، رحمت اللہ قریشی، شیخ اختر، عبد الطارق نیازی،رانا طارق، راؤ عابد، راؤ شمشاد، نجم النساء، صفدر کالرو، ،یونس حسن، منیر انجم ، امتیاز طاہر و دیگر عہدیداران نے کہا ہے کہ نت نئے تجربات گورنمنٹ سکولوں کو تباہ کر رہے ہیں۔وزیر اعلی پنجاب کے گرد ایسے ماہرین تعلیم جمع ہیں جن کا زمینی حقائق سے کوئی واسطہ نہیں ۔گزشتہ 15سالوں سے مصنوعی اعداد وشمار پیش کرکے تعلیمی میدان میں خاطر خواہ ترقی حاصل نہیں سکی۔ پیف بذات خود کرپشن کا گڑھ ہے۔پنجاب بھر میں سرکاری سکولوں کو پیف کے ذریعے پرائیویٹ پارٹنراور این جی اوز کے حوالہ کرنا غیر دانشمندانہ اقدام ہے۔

جن سکولوں کار رزلٹ اچھا ہے اور عمارات بھی اچھی ہیں وہ سکول بھی پیف کو دئیے جا رہے ہیں۔راہنماؤں نے کہاکہ سرکاری سکولوں کو سوچی سمجھی سازش کے تحت ناکام بنانے کے لئے منفی ہتھکنڈے استعمال کئے جا رہے ہیں۔ راتوں رات اصطلاحات کو عملی جامہ پہنانے نے سرکاری سکولوں کے نظام کو تباہ کر رکھا ہے۔بے جا خط و کتابت ، معلومات کا حصول ، باربار اساتذہ کو دفاتر طلب کرنا جیسے اقدامات نے اساتذہ کی کارکردگی کو شدید متاثر کیا ہے۔ اساتذہ خوف و ہراس کی فضاء میں بہتر نتائج نہیں دے سکتے۔ گونمنٹ کے سکولوں کی پیف کو حوالگی کے عمل کی وجہ سے تین لاکھ سے زائد اساتذہ عدم تحفظ کاشکار ہوگئے ہیں۔ ان حکومتی اقدامات کی وجہ سے اساتذہ کو سڑکوں پر احتجاج پر مجبور کیا جارہا ہے۔لہذا وزیر اعلی پنجاب ، وزیر تعلیم پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب اور سیکرٹری تعلیم پنجاب حالات کی سنگینی کا نوٹس لیں۔انہوں نے کہا کہ پنجاب بھر کے اساتذہ 14 مئی بروز ہفتہ کو 2 بجے دن پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاجی مظاہر ہ کریں گے اور دھرنا دیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4