جسٹس فرخ عرفان آف شور کمپنی سمیت کسی بھی کاروبار سے منسلک نہیں، یاور عرفان

جسٹس فرخ عرفان آف شور کمپنی سمیت کسی بھی کاروبار سے منسلک نہیں، یاور عرفان

لاہور(نامہ نگار خصوصی )آف شور کمپنیوں کی ملکیت کے حوالے سے پاناما لیکس میں نام سامنے آنے پر لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان کے بھائی یاور عرفان خان نے وضاحت جاری کی ہے کہ مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان نے لاہور ہائی کورٹ کے جج کے طور پر حلف اٹھانے سے قبل اپنے تمام کاروبار اور لاء فرم سے نہ صرف قطع تعلق کرلیا تھا بلکہ ان کی ڈائریکٹر شپ سے بھی استعفیٰ دے دیا تھا ۔یاور عرفان خان کی طرف سے جاری ہونے والے پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ جسٹس فرخ عرفان خان کی لاء فرم کا شمار ٹریڈ مارک لاء کی دنیا کی 20بڑی فرموں میں ہوتا تھا اور انہوں نے پاکستان سے کوئی رقم بیرون ملک منتقل نہیں کی بلکہ اپنی قانونی خدمات کے عوض پاکستان سے باہر جو رقم کمائی اسی سے کاروبار کیا اور رقم باہر لے جانے کی بجائے پاکستان کے اندر لے کر آئے جبکہ اب وہ آف شور کمپنی سمیت کسی بھی کاروبار سے منسلک نہیں ہیں اور نہ ہی ان کے پاس کسی کمپنی کی ملکیت ہے ۔یاور عرفان خان کا کہنا ہے کہ اس وضاحت کے بعد جسٹس فرخ عرفان کے حوالے سے بحث بند ہو جانی چاہیے ۔

یاور عرفان

مزید : کراچی صفحہ اول