کم عمر طلبہ کو نویں جماعت میں داخلہ نہ دینے کی پالیسی کے خلاف درخواست کی سماعت کے لئے لارجربنچ تشکیل دینے کی سفارش

کم عمر طلبہ کو نویں جماعت میں داخلہ نہ دینے کی پالیسی کے خلاف درخواست کی ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے 12سال سے کم عمر طلبہ کو نویں جماعت میں داخلہ نہ دینے کی پالیسی کے خلاف دائر درخواستوں کی سماعت کے لئے لارجربنچ تشکیل دینے کی سفارش کر دی۔جسٹس شاہد کریم نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار طالبہ رئیسہ حفیظ کے وکیل شیراز ذکا نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ آرٹیکل 25(اے )کے تحت مفت اور لازمی تعلیم ریاست کی ذمہ داری ہے،بارہ سال سے کم عمر طلبہ کو نویں جماعت میں داخلہ نہ دینے سے متعلق بورڈ نے قوانین بنا رکھے ہیں جوآئین کی روح کے منافی ہیں جبکہ آئین اور ملکی قوانین کے تحت اگلی جماعتوں میں داخلے کے لئے عمر کی کوئی قید نہیں ہے۔ عدالت نے لارجر بنچ تشکیل دینے کی سفارش کرتے ہوئے فائل چیف جسٹس کو واپس بھجوا دی ہے۔

لارجر بنچ

مزید : صفحہ آخر