پانامالیکس کو چور دروازے سے اقتدادر تک رسائی کیلئے بطور سیڑھی استعمال کیا جا رہا ہے ، امیر مقام

پانامالیکس کو چور دروازے سے اقتدادر تک رسائی کیلئے بطور سیڑھی استعمال کیا جا ...

 شیرگڑھ (نامہ نگار) وزیراعظم پاکستان کے مشیر خاص انجینئر امیر مقام نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس کو چور دروازے سے کرسی اقتدار تک رسائی حاصل کرنے والے بطور سیڑھی استعمال کررہے ہیں جو لوگ پانامہ لیکس پر واویلہ کررہے ہیں ان کا پانامہ لیکس کے تہہ تک پہنچنے کے ساتھ کوئی سروکار نہیں بلکہ وہ ملک میں سیاسی انتشار پھیلانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں پانامہ لیکس کی انکوائری میں سب سے بڑی رکاؤٹ خود اپوزیشن ہیں مسلم لیگ پاکستان کی خالق جماعت ہے میاں نواز شریف قائد اعظم ثانی کا کردار دھرارہے ہے کپتان خان صوبہ خیبر پختونخوا میں حسب وعد گوڈ گورننس کی عوام کو فراہمی ممکن بنائیں پھر پاکستان کے وزیراعظم بننے کا خواب دیکھا کریں ان خیالات کا اظہار انہوں نے تحصیل تخت بھائی کے مختصر دورے کے دوران مسلم لیگ کے مقامی رہنماء کی رہائش گاہ پر لیگی وفود کے ساتھ گفتگو کے دوران کیا انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت اپنی احداف کے حصول کی طرف تیزی سے گامزن ہیں حکومت مضبوط ہے انتخابات سے قبل مڈٹرم انتخابات کا خواب دیکھنے والے خواب خرگوش میں مبتلاہیں نوازشریف حکومت نے ہرمقام پر کپتان کے چھکے چھڑادئیے ہیں اب وہ کسی بھی پچ پر بالنگ کرنے کا قابل نہیں رہا وہ اپنی سیاسی زندگی کے آخری سانسیں لے رہاہے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نے ہمیشہ پاکستان اور پاکستانی عوام کے مفادات کو اولیت دی ہے جبکہ اپنے سیاسی مفادات کو ثانی حیثیت دی ہے پانامہ لیکس منتخب وزیراعظم کے خلاف ڈیکٹیٹروں کے سابق سازشوں کی طرح ایک نئی سازش ہے مگر مسلم لیگ کی حکومت مضبوط بنیادوں پر کھڑی ہے حکومت اور اداروں میں کوئی اختلاف نہیں آپریش ضرب عضب کامیابی سے ہمکنار ہونے والی ہے آئی ڈی پیز کو باعزت اپنے گھروں کو واپس کرنے کے منصوبے پر حکومت کام کررہی ہے دہشت گردی کا خاتمہ کرکے دم لیں گے روزگار کے مواقع پیدا کئے جائیں گے بیرونی سرمایہ کاروں کو ملک میں سرمایہ کاری کے طرف راغب کیاجارہا ہے ہر شہری کو ان کے گھر کے دہلیز پر تعلیم اور صحت کے مواقع فراہم کئے جائیں گے ملک میں شاہراہوں اور صنعتوں کا جال بچھایا جائے گا اور پاکستان کو ترقی کے شاہراہ پر گامزن کیاجائے گا بلوچستان سمیت چھوٹے صوبوں کے احساس محرومی کو دور کیاجائے گا ملک کے تینوں چھوٹے صوبے بھی پاکستان کا حصہ سمجھتے ہیں او ر ان کو ان کا حق دیاجائے گا مسلم لیگ کے اندر کوئی اختلاف نہیں اختلاف رائے جمہوریت کی زینت ہے ناراض کارکنان کو راضی کاجائے گا صوبہ خیبر پختونخوا میں مسلم لیگ کو فعال اور مضبوط جماعت بنادی جائے گی

مزید : پشاورصفحہ اول