خواتین پاکستان کو ترقی کی نئی منزلوں سے روشناس کراسکتی ہیں،گورنر پنجاب

خواتین پاکستان کو ترقی کی نئی منزلوں سے روشناس کراسکتی ہیں،گورنر پنجاب

راولپنڈی (جنرل رپورٹر)گورنر پنجاب ملک محمد رفیق رجوانہ نے کہاہے کہ پاکستان کے قابل فخر تعلیمی ادارے ملک میں اعلی تعلیم کے فروغ میں کلیدی کردار ادا کررہے ہیں۔ انہوں نے خواتین کی تعلیم و تربیت پر زور دیتے ہوئے کہاکہ خواتین معاشرے میں باوقار مقام حاصل کرکے قومی ترقی کے عمل میں بھرپور کردار ادا کریں اور ان بچوں اور بچیوں کو بھی آگے بڑھنے کا موقع فراہم کریں جو غربت و افلاس کے باعث معیاری تعلیمی سہولیات سے محروم ہیں۔ انہوں نے یہ بات فاطمہ جناح ویمن یونیورسٹی راولپنڈی کے پندرھویں کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوے کہی۔چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر مختار احمد، وائس چانسلر بارانی زرعی یونیورسٹی ڈاکٹر نیاز احمد ، دیگر یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز، سفارت کاروں کے علاوہ فکلٹی ممبران ، طلباء و طالبات اور والدین نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔گورنر پنجاب نے ڈگریاں اور میڈل حاصل کرنے والے طلباء طالبات اور ان کے والدین اور اساتذہ کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے یونیورسٹی کے اعلی تعلیمی نظام اور کامیابیوں پر یونیورسٹی کی وائیس چانسلرکی کوششوں کو سراہا اور کہاکہ خواتین کی تعلیم عام ہونے سے ملک ترقی کرتے ہیں اور تعلیمی شعبے کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت نے بنیادی سطح سے پیشہ وارنہ اعلی تعلیم کے فروغ اور سہولیات کی فراہمی کے لئے ہر ممکن سہولیات فراہم کی ہیں جن کی وجہ سے میں میعار تعلیم اور شرح خواندگی میں اضافہ ہو رہا ہے۔گورنر پنجاب نے کہا کہ تعلیم یافتہ خواتین پڑھ لکھ کر گھروں میں نہ بیٹھیں اور معاشرے میں خدمت سر انجام دے کر علم کی روشنی ہر سو پھیلائیں، انہوں نے کہا کہ ملک کا مستقبل روشن ہے اورخواتین ملک و قوم کا وقار بلند کرکے پاکستان کو ترقی کی نئی منزلوں سے روشناس کراسکتی ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہر شعبے میں بہتری کی گنجائش موجود ہے اور خواتین تمام شعبوں میں اپنا کردار ادا کر سکتی ہیں۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ پوزیشن ہولڈرطالبات کی ہر ممکن حوصلہ افزائی کریں تاکہ وہ مزید جوش و جذبے کے محنت کرکے ساتھ عملی خدمات کے لئے آگے بڑھ سکیں۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم خوشحالی اور ترقی کا اہم ذریعہ ہے جس کے بغیر قومی ترقی کا حصول ممکن نہیں ۔ انہوں نے کہاکہ تعلیم شعور پیدا کرتی ہے اور ذہنی و تخلیقی صلاحیتوں کو نکھارتی ہے۔گورنر نے طالبات کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی ترقی خواتین کے فعال کردار کے بغیر نا مکمل ہے اور ہمیںآگے بڑھنے اور مستقبل کے چیلنجزسے نمٹنے کے لئے خود کو تیار کرنا ہوگا ۔قبل ازیں وائس چانسلر فاطمہ جناح وویمن یونیورسٹی راولپنڈی ڈاکٹر ثمینہ امین قادر نے خطاب کرتے ہوئے یونیورسٹی کی تعلیمی اور ہم نصابی سرگرمیوں میں نمایاں کامیابیوں کی تفصیلات سے آگاہ کیا اور کہاکہ یونیورسٹی کامیابیوں کے سفر پر گامزن ہے اور کانووکیشن میں ایک پی ایچ ڈی کے علاوہ 130 ایم فل ڈگریاں ، 669 ماسٹر ڈگریاں اور 570 گریجویشن ڈگریاں دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ یونیورسٹی میں ان شعبوں میں خواتین کو تعلیم دی جا رہی ہے جس سے وہ عملی زندگی میں قائدانہ کردار اد ا کر سکتی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ یونیورسٹی میں فزکس اور الیکٹرانکس کے نئے انڈر گریجویٹ اور کمپیوٹر سائنس، ڈیفنس و ڈپلومیٹک سٹڈیزاور ایجوکیشن میں ایم فل پروگرام پروگرام شروع کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہاتعلیم قومی ترقی اہم کردار ادا کرتی ہے اور جدید تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے فاطمہ جناح وویمن یونیورسٹی میں نئے تعلیمی پروگرام متعارف کرائے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ یوایس ایڈ کے تعاون سے یونیورسٹی میں تعمیر ہونے والا نیا ایجوکیشن کیمپس جولائی 2016 ء تک مکمل کر لیا جائے گا۔چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر مختار احمد نے کہا ایچ ای سی تعلیمی نظام کو بہتر بنانے کے لئے کوشاں ہے انہوں نے تعلیمی ترقی کے لئے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔انہوں نے مزید کہا کہ تعلیم خوشحالی اور ذاتی ترقی کا اہم ذریعہ ہے جس کے بغیر ترقی کا حصول ممکن نہیں۔ انہوں نے کہاکہ یہ امر خوش آئند ہے کہ پاکستان میں شرح خواندگی کا تناسب48 فیصدہے جس میں بڑی تعداد خواتین کی ہے اور وہ ہر شعبے میں نمایاں کردار ادا کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے تعلیمی اداروں کی ذ مہ داری ہے کہ وہ نوجوان طلبہ کو صحیح راہ دکھائیں ۔ جب تک ہمارے تعلیمی اداروں میں تخلیقی خیال اور برداشت کو ٖفروغ دینے کا سلسلہ جاری ہے تب تک ہم کامیابی اور خوشحالی کے رستے پر گامزن رہیں گے ۔ ہمیں روایتی تعلیم کو فروغ دینے کے علاوہ پیشہ ورانہ اور تکنیکی تعلیم پر بھی زور دینا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ فاطمہ جناح مقتدر عالمی تعلیمی اداروں سے رابطے کے ذریعے طالبات کو تعلیمی تحقیق کے مواقع فراہم کر رہی ہے۔ طالبات میں فرسٹ وویمن بنک اورمیڈیا ڈیویلپمنٹ ٹرسٹ مشعال پاکستان کی طرف سے بھی گولڈ میڈل تقسیم کئے گئے ۔ مجموعی طور پر میڈل حاصل کرنے والی طالبات میں مسعروج احمد(بیہوریل سائنسزماسٹرز ) ،مس ندا جمشید (بیہوریل سائنسز بیچلرز) ، مہمونہ ناز (بزنس ایڈمنسٹریشن ماسٹرز) ، مس اقصی مرتضی اور مس سدرہ بابرخان ، (بزنس ایڈمنسٹریشن بیچلرز) ، مس کومل شہزاد (بزنس سٹڈیز بیچلرز) ، مس مومنہ حفیظ (کمپیوٹرسائنسز ماسٹر)،مس انیقہ یاسین (کمپیوٹرسائنسز بیچلرز) مس فزا سعید (کمیونیکیشن اینڈ میڈیا سٹڈیز ماسٹرز)مس زنیرہ ملک (کمیونیکیشن اینڈ میڈیا سٹڈیز بیچلرز)،مس طیبہ اسلم(ڈیفنس اینڈ ڈپلومیٹک سٹڈیزماسٹرز)،مس رافعیہ مشتاق خان (ڈیفنس اینڈ ڈپلومیٹک سٹڈیز بیچلرز)،مس نور الصباح منیب(اکنامکس ماسٹرز )، مس اقرا ء یوسف (اکنامکس بیچلرز)،امس صوفیہ نور(ایجوکیشن ماسٹرز)، مس روہانیہ نبیل زادی(ایجوکیشن بیچلرز)،مس زینب مسعود(انگلش ماسٹرز)مس مریم محمود (انگلش بیچلرز) ،مسشان بی بی جعفری(انوئرمینٹل سائنسزبیچلرز)،مسغزالہ اقبال رانا (فائن آرٹس ماسٹرز)،مس بشری جمیل(فائن آرٹس بیچلرز)،مس صائمہ ہارون(جینڈر سٹڈیز ماسٹرز)،حنا مظہر (جینڈر سٹڈیزبیچلرز)،سمیرا خالد (اسلامک سٹڈیزماسٹرز) ، مس جویریہ بیگ اورمس مدیحہ حمید(اسلامک سٹڈیزبیچلرز)مس عمارہ عثمان(پبلک ایڈمنسٹریشن ماسٹرز) مس جویریہ نفیس(پبلک ایڈمنسٹریشن بیچلرز)، مس ثنا آرزو (میتھمیٹکس بیچلرز) ، مسسمیرا جاوید (کمپیوٹر آرٹس بییچلرز) اور مس علفیہ فدا علی (سافٹ وئیر انجنیرنگ بیچلرز)، مس مریم حفیظ (ایم فل کاونسلنگ سائیکالوجی)، مس فرح ناز (ایم فل اکنامکس )، مس ازکاء خان(ایم فل انگلش) ، مس حنا ناظر(ایم فل بائیو ٹیک)، مس صائمہ طفیل (ایم فل کیمسٹری) ، مس آمنہ بٹ (ایم فل انوئرمینٹل سائنسز) شامل ہیں۔سلورمیڈل حاصل کرنے والی طالبات میں مس عفیفہ یوسف(بیہوریل سائنسزماسٹرز ) ،مس رابعہ کرن (بیہوریل سائنسز بیچلرز) ، مسسارہ حمیداور مس ثناء فاطمہ(بزنس ایڈمنسٹریشن بیچلرز)، مسثناء افضل (کمپیوٹرسائنسز ماسٹر)،مس منزہ انثار (کمپیوٹرسائنسز بیچلرز) مسصبا حمید (کمیونیکیشن اینڈ میڈیا سٹڈیز ماسٹرز)مس زرش گل باز (کمیونیکیشن اینڈ میڈیا سٹڈیز بیچلرز)،مس علیزہ ملک اور یسرہ زاہد(ڈیفنس اینڈ ڈپلومیٹک سٹڈیزماسٹرز)،مس نوشین اسرا ر (ڈیفنس اینڈ ڈپلومیٹک سٹڈیز بیچلرز)،مسسونیہ حیات(اکنامکس ماسٹرز )، مس رافعہ ریاض (اکنامکس بیچلرز)،امس فروہ بتول(ایجوکیشن ماسٹرز)، مس انعم اقبال (ایجوکیشن بیچلرز)،مس مریم طارق(انگلش ماسٹرز)مس سونیہ عبدلقیوم خان (انگلش بیچلرز) ،مس جویریہ طارق(انوئرمینٹل سائنسزبیچلرز)،مسسندس ثناء (فائن آرٹس ماسٹرز)،مس ردا ثاقب(فائن آرٹس بیچلرز)،مس انا حسین (جینڈر سٹڈیز ماسٹرز)،مس حفصہ خان اور انا پرویز (جینڈر سٹڈیزبیچلرز)، مس حافظہ سارا تنویر ،سونیہ خالد(اسلامک سٹڈیزماسٹرز)مس عماربٹ(اسلامک سٹڈیز بیچلرز)مس انیقہ ،(پبلک ایڈمنسٹریشن ماسٹرز) اقراء عقیل (پبلک ایڈمنسٹریشن بیچلرز)، مس مہوش اعجاز (میتھمیٹکس بیچلرز) ، مسمدیحہ عابد (کمپیوٹر آرٹس بییچلرز) اور مس سمعیہ اقبال (سافٹ وئیر انجنیرنگ بیچلرز) شامل ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر