فوڈ سنٹرز پر کسانوں کی تذلیل کیخلاف اسمبلی میں آواز اٹھاؤں گا،جمشید دستی

فوڈ سنٹرز پر کسانوں کی تذلیل کیخلاف اسمبلی میں آواز اٹھاؤں گا،جمشید دستی

چوک سرورشہید(سپیشل رپورٹر)فوڈ سنٹروں پر کسانوں کو ذلیل و خوار کیا جارہا ہے۔ پنجاب حکومت ڈرامے بازی بند کرے۔ غریب کسان کوگندم کی قیمت نہیں دی جارہی۔ کسان(بقیہ نمبر34صفحہ7پر )

اپنے قرضے اتارنے کے لئے اپنی گند م اونے پونے بیچنے پر مجبور ہے۔کروڑوں روپے کی کرپشن ہورہی ہے۔اسمبلی اجلاس میں کسانوں کی تذلیل کے خلاف آواز اٹھاؤنگا،ان خیالات کا اظہار جمشید احمد خان دستی ایم این اے نے مظفرگڑھ سے پشاور جاتے ہوئے چوک سرورشہید صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ جمشید احمد خان دستی نے کہا کہ حکومت پنجاب نے کسانوں سے گندم خریدنے اور ریلیف دینے کے لئے بڑے دعوے کئے تھے۔ لیکن آج میں نے دو تین گندم خریدار سنٹر کا دورہ کیا۔ مجھے بہت دکھ کے ساتھ یہ کہنا پڑرہا ہے کہ کسان جو کہ پہلے ہی حالات کا مارا ہوا ہے۔ اسکی فوڈسنٹروں پر تذلیل کی جارہی ہے۔یہ کئی کئی دنوں سے فوڈ سنٹروں پر اپنی گندم لیکر کے کھڑے ہیں لیکن کوئی انکی نہیں سنتا۔ فوڈسنٹروں پر پڑی لسٹوں میں ہزاروں کی تعداد میں جعلی نام درج ہیں۔ اور حقد ار کو اسکا حق نہیں مل رہامسلم لیگ ن کے ٹاؤٹ ان سنٹروں پر لاکھوں نہیں کروڑوں روپے کما رہے ہیں۔ حکومت پنجاب ڈرامے بازی کررہی ہے۔بنگلہ دیش اور انڈیااور دنیا بھر میں کہیں بھی گندم کے لئے پولی تھین استعمال نہیں ہوتے۔ جیوٹ کی بوریوں میں گندم محفوظ بھی رہتی ہے اور مضر صحت بھی نہیں بنتی ۔ لیکن کرپشن مافیا نے یہاں بھی کرپشن کرکے اپنی پولی تھین کی ملوں کو فروغ دیا۔قومی اسمبلی کے اجلاس میں اس مسئلہ کو اٹھاؤں گا، اور کسانوں کو ان کا حق دلواؤنگا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر