حکومتی اتحاد کا ٹی او آرز پر اپوزیشن سے رابطے کافیصلہ، ٹی او آرز پر تحفظات اور اپوزیشن کے کردار پر تشویش ہے: مولانا فضل الرحمان

حکومتی اتحاد کا ٹی او آرز پر اپوزیشن سے رابطے کافیصلہ، ٹی او آرز پر تحفظات ...
حکومتی اتحاد کا ٹی او آرز پر اپوزیشن سے رابطے کافیصلہ، ٹی او آرز پر تحفظات اور اپوزیشن کے کردار پر تشویش ہے: مولانا فضل الرحمان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت اتحادی جماعتوں کے اجلاس میں پانامہ لیکس پر اپوزیشن کے ٹی او آرز مسترد کر دیئے گئے ہیں اور اس معاملے پر اپوزیشن سے رابطہ کرنے کافیصلہ کر لیا گیا ہے۔ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ اپوزیشن کے ٹی او آرز پر تحفظات ہیں، اپوزیشن نے اب ٹی او آرز کو متنازع بنانے کی کوشش کی ہے، اپوزیشن کو سنجیدہ دائرہ میں رہ کر مطالبات کرنے چاہئیں ۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کے زیر صدارت حکومتی اتحاد کے اجلاس میں مولانا فضل الرحمان، محمود خان اچکزئی ، پروفیسر ساجد میر، آصف کرمانی، اعجاز الحق، اکرام درانی اور میر حاصل بزنجو سمیت وفاقی وزرا اسحاق ڈار، چوہدری نثار علی خان، خواجہ آصف،زاہد حامد ،پرویزرشید، وزیراعظم کے مشیر اور قانونی ماہرین شریک ہوئے۔ اجلاس میں اپوزیشن کے ٹی او آرز پر مشاورت کی گئی جبکہ وفاقی وزیر قانون زاہد حامد اور قانونی ماہرین کی ٹیم نے حکومتی اتحادیوں کو ٹی او آرز کے قانونی پہلوﺅں پر بریفنگ دی۔

ذرائع کے مطابق اجلاس کے شرکاءنے اپوزیشن کے ٹی او آرز کو مسترد کرتے ہوئے اپوزیشن جماعتوں سے رابطہ کا فیصلہ کیا۔ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کے ٹی او آر حکومت کو موصول ہوگئے ہیں اور ہمیں ان پر تحفظات ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

انہوں نے کہا کہ پانامہ لیکس کے تحقیقات کے مطالبے پر اپوزیشن تضاد کا شکار ہے اور اپنے ہر مطالبے سے پیچھے ہٹی ہے، اپوزیشن کا مطالبہ حکومت پورا کرتی ہے اور اپوزیشن مکر جاتی ہے۔ اپوزیشن کی جانب سے پہلے پارلیمانی سطح پر تحقیقاتی کمیٹی کا مطالبہ آیا مگر پھر اپنے مطالبے سے پیچھے ہٹ گئے جس کے بعد ان کے مطالبے پر وزیراعظم نے چیف جسٹس کو خط بھی لکھ دیا اور اب ٹی او آرز کو متنازع بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے کردار پر ہمیں متفقہ تشویش ہے ، انہیں چاہئے کہ سنجیدہ دائرے میں رہ کر مطالبات کریں۔

مزید : قومی /اہم خبریں