وزیر اعظم کے رابطہ کرنے کے بعد اپوزیشن پاناما لیکس کے معاملے پر مزید مشاورت کرے گی: شاہ محمود قریشی

وزیر اعظم کے رابطہ کرنے کے بعد اپوزیشن پاناما لیکس کے معاملے پر مزید مشاورت ...
وزیر اعظم کے رابطہ کرنے کے بعد اپوزیشن پاناما لیکس کے معاملے پر مزید مشاورت کرے گی: شاہ محمود قریشی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ملتان (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ چیف جسٹس کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن پاناما لیکس کے معاملے کی تحقیقات کرے۔ وزیر اعظم نے اپنے اتحادیوں سے مشورہ کیا ہے اور ہماری اطلاعات کے مطابق وہ ہم سے رابطہ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ ہم بھی وزیر اعظم کی جانب سے رابطہ کیے جانے کا انتظار کررہے ہیںجس کے بعد متحدہ اپوزیشن مزید مشاورت کرے گی۔

ملتان بار کے صدر کو عمران خان کا خط پیش کرنے کے بعد میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ عمران خان کا خط بار کی خدمت میں پیش کرنے آیا ہوں گھوم پھر کر یہیں آنا پڑتا ہے کیونکہ بار کے بغیر کام نہیں چلتا۔ پاناما لیکس کے معاملے پر مجوزہ جوڈیشل کمیشن کے قیام کیلئے ملک کی 9 سیاسی جماعتوں نے ٹی او آرز بنائے ہیں اور ٹی او آرز بنانے میں اعتزاز احسن نے بنیادی کردار ادا کیا جبکہ حامد خان کا کردار بھی انتہائی اہمیت کا حامل رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں کرپشن کا کینسر جان لیوا ہوگیا ہے مشتاق رئیسانی کے گھر سے رقم ملنا اس کی بڑی مثال ہے جو بجٹ کا محافظ ہے اگر وہی اس پر ہاتھ صاف کرنا شروع کردے تو گلشن کا خدا ہی حافظ ہے۔سینئر بارکونسلز نے متفقہ طور پر 3 قرار دادیں پاس کی ہیں جن میں سے انہوں نے اپنی ایک قرار داد میں مطالبہ کیا ہے کہ وزیر اعظم کو تحقیقات مکمل ہونے تک اپنے عہدے تک مستعفی ہوجانا چاہیے ۔ بار کونسل کے اس مطالبے سے پاکستان تحریک انصاف کے موقف کو تقویت ملی ہے۔

انہوں نے پاکستانی نژاد برطانوی شہری صادق خان کے لندن کا میئر منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ایک مسلمان صادق خان کا تاریخ میں پہلی بار لندن کا میئر منتخب ہونا ہمارے لیے بہت بڑا اعزاز ہے ۔ میں صادق خان کے والد، بیوی اور ان کے اہل خانہ کو اپنی اور پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے مبارک باد پیش کرتا ہوں۔

مزید : قومی /اہم خبریں