مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے مظالم جاری، پلوامہ میں 3نہتے کشمیریوں کو شہید کر کے حزب المجاہدین کے دہشت گرد قرار دے دیا ،کپواڑہ میں جاری آپریشن میں تیزی

مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے مظالم جاری، پلوامہ میں 3نہتے کشمیریوں کو شہید ...
مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے مظالم جاری، پلوامہ میں 3نہتے کشمیریوں کو شہید کر کے حزب المجاہدین کے دہشت گرد قرار دے دیا ،کپواڑہ میں جاری آپریشن میں تیزی

  

سرینگر (مانیٹرنگ ڈیسک)سرینگر(مانیٹرنگ ڈیسک)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کا نہتے کشمیریوں پر ظلم ستم اور انسانی حقوق کی شدید خلاف ورزیاں جاری ہیں،ضلع پلوامہ میں سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کر کے 3کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا ،مارے گئے تینوں افراد حزب المجاہدین کے دہشت گرد تھے ،بھارتی فوج کا دعوی۔

بھارتی نجی چینل ’’زی نیوز ‘‘کے مطابق جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں بھارتی فوج کی جانب سے خفیہ اطلاعات پر پنجگم گاؤں کا گھیراؤ کر کے سرچ آپریشن اور گھر گھر تلاشی کا عمل جاری تھا کہ ایک گھر میں چھپے بیٹھے مبینہ دہشت گردوں نے بھارتی فوج پر فائرنگ کر دی ،جوابی فائرنگ میں تین شدت پسند مارے گئے ،بھارتی فوج کا کہنا ہے کہ جاں بحق ہونے والے تینوں افراد مقامی اور ان کا تعلق حزب المجاہدین سے تھا ،ان کی شناخت اشفاق احمد ڈار،احمد بابا اور حسیب احمدکے نام سے ہوئی ہے ۔دوسری طرف مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج نے گھر گھر تلاشی مہم کے دوران تین نہتے کشمیری نوجوانوں کو شہید کر کے درندگی اور بربریت کی روائت کو برقرار رکھا ہے ،شہید ہونے والے نوجوان کسی بھی طرح کی غیر قانونی کاروائیوں میں شریک نہیں تھے ۔شہید ہونے والے تینوں نوجوان بھارتی فوج کے مظالم کے خلاف پلوامہ ضلع میں ہونے والے احتجاج میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے تھے ۔ مقبوضہ کشمیر کے ضلع کپواڑہ میں بھارتی فوج آپریشن میں تیزی لے آئی ہے۔ اطلاعات کے مطابق بھارتی وزارت دفاع کے ترجمان کرنل این این جوشی نے ایک میڈیا انٹرویو میں کہا ہے کہ فوج نے ہفتے کی صبح ضلع کپواڑہ کے علاقے کیرن میں جاری آپریشن تیز کر دیا ہے۔ علاقے میں جمعہ کو ہونے والے ایک حملے میں بھارتی فوج کا ایک اہلکار ہلاک ہو گیا تھا۔ ضلع کے علاقوں لالاب، کرال پورہ، درد سن، ریشی گنڈ ، گزریال، وارسن ، چوکی بل، زون ریشی اور بڈنم بل میں بھارتی فوج نے آپریشن شروع کر رکھا تھا۔

مزید : انسانی حقوق