حکومت خواتین کو الیکشن کے عمل سے باہر رکھنا چاہتی ہے،یاسمین راشد

حکومت خواتین کو الیکشن کے عمل سے باہر رکھنا چاہتی ہے،یاسمین راشد

لاہور(لیڈی رپورٹر) انصاف پروفیشنلزفورم کی چےئر پرسن ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ ملک میں مرد اور خواتین ووٹز کے درمیان فرق 12.17ملین تک بڑھ چکا ہے ، 2013کے الیکشن میں مرد اور خواتین ووٹز کے درمیان فرق 10.97ملین تھا جوکہ بڑھ کر 12.17ملین تک پہنچ چکا ہے جوکہ حکومت کے لیے لمحہ فکریہ ہے ۔انہوں نے کہا الیکشن کمیشن آف پاکستان اور نادرا نے اس حوالے سے کوئی ٹھو س اقدمات نہیں کیے ،20سال سے کی عمرکی سواکروڑ 10لاکھ سے زائد خواتین کے قومی شناختی کارڈ تک نہیں بنائے گے ، خواتین کی ہمدریاں تحریک انصاف کے ساتھ ہو نے کی وجہ سے حکومت جان بوجھ کر خواتین کو الیکشن سے کے عمل سے باہر رکھنا چاہتی ہے۔

، پی ٹی آئی اس کی بھر پورمذمت کرتی ہے اور مطالبہ کر تی ہے کہ اس مسئلے کو فوری حل کر جا ئے اور اگر ا یسا نہ کیا گیا تو انصاف پروفیشنلزفورم اس کیخلا ف بھر پور احتجاج کر ے گی ۔انہوں نے کہاکہ خواتین سے ووٹ کا حق چھین کر حقو ق کی پامالی کی جارہی ہے ،1کروڑ 20لاکھ پاکستانی خواتین کا ووٹر لسٹوں میں اندراج ہی نہیں جو کہ خواتین سے ووٹ کابنیادی حق چھیننے کے مترادف ہے اس کی قصوروار موجودہ حکومت ہے ،خواتین کا معاشرے کی تربیت اور ملکی ترقی میں اہم کردار ہے، اتنی بڑی تعداد میں خواتین کے قومی شناختی کا رڈز کا نہ بننا اور خواتین کا ووٹر لسٹوں میں اندراج کا نہ ہو ناحکومت کی کارگردگی پر بھی سوالیہ نشان ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...