کینیڈین خاتون کے اغواء اور قتل کیس میں مال مقدمہ پیش نہ کرنے پر عدالت برہم

کینیڈین خاتون کے اغواء اور قتل کیس میں مال مقدمہ پیش نہ کرنے پر عدالت برہم

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج شہباز حسین نے کینڈین خاتون راجوندرکور کے اغواء اور قتل کیس میں مال مقدمہ پیش نہ کرنے پر تفتیشی افسر کو ڈانٹ پلادی ،فاضل جج نے آئندہ سماعت پر مال مقدمہ پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت 11مئی تک ملتوی کردی ہے ۔یاد رہے کہ گزشتہ روزسماعت کے موقع پراستغاثہ کے آخری گواہ سجوارطارق کا بیان قلمبند کیا جاتا تھا ۔عدالت میں تھانہ سرورروڈ پولیس نے کینڈین خاتون راجوندر کورکے اغواء اور قتل کے الزام میں دو ملزمان حافظ شہزاداورکرشنا راؤ کے خلاف چالان پیش کررکھاہے۔حافظ شہزاد جیل میں قید جبکہ کرشنا راؤ مفرور ہے۔عدالت میں مقتولہ کے والد اور مدعی سکندرسنگھ اپنا بیان قلمند کراچکے ہیں۔عدالت میں استغاثہ کے آخری گواہ سجوارطارق کا بیان قلمبند ہونا تھا لیکن پولیس کی طرف سے مال مقدمہ عدالت میں پیش نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے سماعت نہ ہوسکی۔مال مقدمہ پیش نہ کرنے پر عدالت نے تفتیشی افسر کو ڈانٹ پلا دی ،عدالت نے حکم دیا کہ آئندہ تاریخ پر ہر حال میں مال مقدمہ پیش کیا جائے تاکہ گواہ کا بیان قلمبند ہو سکے۔ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے کینڈین خاتون رجوندرکور کودھوکے سے پاکستان بلایا بعد میں ائیرپورٹ سے اغوا ء کیا اورمقتولہ کا سامان لوٹنے کے بعد قتل کرکے اس کی نعش نہرمیں پھینک دی تھی۔

کینیڈین خاتون کیس

مزید : علاقائی


loading...