عمران خان صادق اور امین نہیں رہے ، نااہلی کیلئے سپریم کورٹ میں آئینی درخواست دائر

عمران خان صادق اور امین نہیں رہے ، نااہلی کیلئے سپریم کورٹ میں آئینی درخواست ...

اسلام آباد(اے این این)سپریم کورٹ میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی نااہلی کیلئے آئینی درخواست دائر کردی گئی۔ بیرسٹر دانیال چوہدری کی طرف سے دائرکی گئی درخواست میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ عمران خان پاناما لیکس کے حوالے سے قوم سے مسلسل جھوٹ بول رہے ہیں اور جھوٹ بولنے کی وجہ سے وہ آئین کی شق 62 اور 63 کی خلاف ورزی کے مرتکب ہورہے ہیں۔ انہوں نے موقف اختیار کیا کہ شق 62 اور 63 کی خلاف ورزی کی وجہ سے عمران خان صادق اور امین نہیں رہے لہذا انہیں اسمبلی کی رکنیت کیلئے نااہل قرار دیا جائے۔ دانیال چوہدری نے سپریم کورٹ میں جمع کرائی جانے والی درخواست میں عمران خان اور پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا)کو فریق بنایا ہے۔ دانیال چوہدری نے درخواست کے ہمراہ اخبارا ور ٹی وی انٹرویو بھی منسلک کئے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ میں پاناما کیس کے فیصلے پر عمل درآمد کے لئے قائم خصوصی بینچ میں سماعت کے دوران بینچ کے سربراہ جسٹس اعجاز افضل نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاناما کیس فیصلے کے بعد ایک سیاسی لیڈر نے کہا کہ پانچوں ججز نے وزیراعظم کو جھوٹا قرار دیا، وزیراعظم کو نہ تو میں نے جھوٹا قرار دیا اور نہ ہی اس بینچ میں موجود باقی دو ججز نے ایسا کہا ۔ جسٹس اعجاز افضل نے کہا تھا کہ اس لیڈر نے عوام سے دھوکہ دہی کی اور جھوٹ بولا، میں نے تو کسی کو جھوٹا قرار نہیں دیا، سپریم کورٹ کے ججز کو بدنام کیا گیا تو کارروائی کی جائے گی تاہم جسٹس اعجاز افضل نے اس سیاسی رہنما کا نام نہیں لیا جو پاناما کیس کے حوالے سے عوام سے جھوٹ بول رہا ہے۔ خیال رہے کہ عمران خان اور جہانگیر ترین کے خلاف الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی)میں اثاثے اور آف شور کمپنیاں ظاہر نہ کرنے سمیت بیرون ملک سے حاصل ہونے والے مبینہ فنڈز سے پارٹی چلانے کے الزامات پر مسلم لیگ ن کے رہنما حنیف عباسی نے بھی سپریم کورٹ میں درخواست دائر کررکھی ہے۔ گزشتہ دنوں دائر درخواستوں پر سماعت کے دوران درخواست گزار کے وکیل نے غیرملکی فنڈنگ اور اثاثوں سے متعلق جھوٹ پر مبنی سرٹیفکیٹ جمع کروانے پر عمران خان کی نااہلی کا مطالبہ کیا تھا۔

درخواست دائر

مزید : علاقائی


loading...