بھارت کی ’’سولو فلائٹ‘‘نے سیٹلائٹ منصوبہ سے باہر رہنے پر مجبور کیا، پاکستان

بھارت کی ’’سولو فلائٹ‘‘نے سیٹلائٹ منصوبہ سے باہر رہنے پر مجبور کیا، ...

اسلام آباد(اے این این) بھارت کی جانب سے جنوبی ایشیائی علاقائی تعاون کی تنظیم(سارک)کے رکن ممالک کو سارک سیٹلائٹ کی تیا ر ی میں حصہ لینے کی اجازت نہ دینے کی وجہ سے پاکستان نے اس پراجیکٹ میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ کیا۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے ہندوستان کی جانب سے خلا میں چھوڑے گئے ،’’ساؤتھ ایشیا سیٹلائٹ ‘‘ میں پاکستان کی عدم شمولیت کی وجہ بیان کرتے ہوئے کہا،چونکہ ہندوستان اس منصوبے کو باہمی تعاون سے تیار کرنے پر راضی نہیں تھا، لہٰذا پاکستان کیلئے یہ ممکن نہیں تھا کہ وہ سارک کی چھتری تلے اس علاقائی منصوبے کی حمایت کرتا۔نفیس زکریا نے مزید بتایا14ء میں کھٹمنڈو میں ہونیوالی 18ویں سارک سربراہی کانفرنس میں ہندوستان نے رکن ممالک کو سارک سیٹلائٹ کا تحفہ دینے کی پیشکش کی تھی، لیکن بعد میں یہ سامنے آیا کہ ہندوستان اس سیٹلا ئٹ کو خود ہی بنانا، لانچ کرنا اور چلانا چاہتا ہے، سوائے اس کے کہ انٹرنیشنل ٹیلی کمیونیکیشن یونین(آئی ٹی یو) میں اسکی رجسٹریشن سارک کے بینر تلے ہوگی۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہاپاکستان کا اپنا خلائی پروگرام بھی ایڈوانس سطح پر ہے اور ہم اپنی مہارت اور تکنیکی معلومات کے اشتراک کیلئے تیار تھے، لیکن بھارت کی ’’سولو فلائٹ‘‘نے پاکستان کو اس منصوبے سے باہر رہنے پر مجبور کیا۔واضح رہے ہندوستان نے گز شتہ روز خلاء میں اپنا مواصلاتی سیٹلائٹ چھوڑا تھا، تاہم پاکستان کی عدم شمولیت کے باعث اسے ’’ساؤتھ ایشین سیٹلائٹ‘‘کا نام دیدیا گیا تھا۔رپورٹس کے مطابق بھارت کی جانب سے یہ اقدام خطے میں خیر سگالی کے فروغ کی کوششوں اور چین کے اثر و رسوخ کو کم کرنے کیلئے اٹھایا گیا۔بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے اس مواصلاتی سیٹلائٹ کو جنوبی ایشیا کیلئے تحفہ قرار دیا۔جنوبی بھارت میں واقع سِری ہری کوٹا اسپیس سینٹر سے سیٹلائٹ کو لے کر جانیوالے بھارتی ساختہ راکٹ کے چھوڑے جانے کے فوری بعد نریندر مودی نے کہا، ساتھ ایشیا سیٹلائٹ کو کامیابی سے چھوڑا جانا ایک تاریخی لمحہ ہے، جس سے روابط کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔اب تک افغانستان، بنگلہ دیش، بھوٹان، نیپال، سری لنکا اور مالدیپ نے اس سیٹلائٹ کو استعمال کرنے کے معاہدے پر دستخط کیے، جبکہ پاکستان نے یہ کہہ کر اس میں شمولیت سے انکار کردیا تھا کہ وہ اپنے سیٹلائٹ پر کام کر رہا ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...