ترکی میں 1700 سال پرانا مندر دریافت

ترکی میں 1700 سال پرانا مندر دریافت
 ترکی میں 1700 سال پرانا مندر دریافت

  


انقرہ (نیوز ڈیسک) صدیوں قبل دنیا کی نظروں سے اوجھل ہوجانے والا ایک قدیم مندر ماہرین آثار قدیمہ نے ایک بار پھر دریافت کرلیا ہے اور اس کے خفیہ گوشے پہلی بار سامنے آئے تو ماہرین بھی حیرت زدہ رہ گئے۔ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق اس مندر کی دریافت دیارباقر شہر کے قریب زرزوان قلعہ کے نیچے ہوئی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس مندر کو ایک رومن دیوتا کی پوجا کرنے والی قوم نے اپنی عبادات کیلئے تعمیر کیا تھا۔ یہاں زیر زمین سرنگوں کا ایک جال بھی واقع ہے جن میں کم از کم 400 لوگ پناہ لے سکتے ہیں۔تاریخ دانوں نے اس مندر کو سورج دیوتا متھراس سے منسوب قرار دیا ہے۔ یہ ایک پراسرار مذہب تھا جس کے ماننے والے دنیا کی نظروں سے چھپ کر اپنی رسوم ادا کیا کرتے تھے۔ مندر تقریباً 35 مربع میٹر کے رقبے پر محیط ہے جبکہ اس کی بلندی تقریباً اڑھائی میٹر ہے۔ مندر کے اندر ایک تالاب بھی تھا جسے مذہبی رسوم کیلئے استعمال کیا جاتا تھا۔ماہرین کا کہنا ہے کہ متھراس مذہب کے ماننے والوں کے تمام مندر ہی زیر زمین اور خفیہ تھے۔ دنیا بھر میں اس مذہب کے 400 سے زائد مختلف آثار دریافت ہوچکے ہیں۔

مندر

مزید : صفحہ اول


loading...