عدالت نے شرجیل میمن کیخلاف 13 مئی تک مزید دلائل طلب کرلیے

عدالت نے شرجیل میمن کیخلاف 13 مئی تک مزید دلائل طلب کرلیے

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی کی احتساب عدالت نے کرپشن ریفرنس میں سابق وزیر اطلاعات سندھ شرجیل انعام میمن کی دستاویزات کی فراہمی سے متعلق درخواست پر13مئی تک مزید دلائل طلب کرلیے ہیں ۔عدالت میں تفتیشی افسر نے مفرور ملزمہ انیتا بلوچ کی جائیداد سے متعلق رپورٹ بھی پیش کی ۔ہفتہ کو کراچی کی احتساب عدالت میں شرجیل میمن سمیت 17 افسران عدالت میں پیش ہوئے۔نیب نے عدالت کو بتایاشرجیل میمن اور دیگر نے 5ارب76کروڑ روپے سے زائد کی کرپشن کی ہے۔ریفرنس میں نجی مشتہرکمپنیوں کے مالکان اوردیگر بھی شریک ملزم ہیں۔شرجیل میمن کے وکلا نے ایک بار پھر دستاویزات پر اعتراضات لگا تے ہوئے عدالت کوبتایا کہ ریفرنس کی بوریاں بھرکے دستاویزات فراہم کی گئیں ہیں لیکن دستاویزات کی فہرست فراہم نہیں کی گئی۔ ایسا نہ ہو نیب بعد میں اور دستاویزات لے آئے لہٰذا دستاویزات فہرست کے ساتھ مہیا کی جائیں۔انہوں نے کہاکہ لگتا ہے مکمل دستاویزات عدالت کے پاس بھی نہیں ہیں۔ریفرنس میں 48 والیم پیش کئے گئے ہیں،ایک ایک کرکے دستاویزات کہاں تلاش کریں؟۔ملزمان کوکرپشن ریفرنس کی مکمل دستاویزات فراہم نہیں کی گئیں،وکلا جان بوجھ کر تاخیری حربے استعمال کررہے ہیں۔عدالت نے ریمارکس میں کہا کہ ملزمان پر لگائے گئے الزامات کی دستاویزات موجود ہیں تو انڈکس کی کیا ضرورت؟۔عدالت نے دستاویزات کی فراہمی سے متعلق 13 مئی تک مزید دلائل طلب کرلئے،جبکہ عدالت نے ملزم حنیف سمیت دو ملزموں کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست بھی منظورکرلی۔تفتیشی افسر نے مفرور ملزمہ انیتا بلوچ کی جائیداد سے متعلق رپورٹ بھی پیش کی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...