نوشہرہ ،قاضی میڈیکل کمپلیکس کی انتظامیہ اور ڈاکٹروں کے مابین اختیارات کی رسہ کشی

نوشہرہ ،قاضی میڈیکل کمپلیکس کی انتظامیہ اور ڈاکٹروں کے مابین اختیارات کی ...

نوشہرہ(بیورورپورٹ) نوشہرہ قاضی میڈیکل کمپلیکس کی انتظامیہ اور ڈاکٹروں کے مابین اختیارات کی رسہ کشی چپقلش شدت اختیار کر گئی آپریشن تھیٹر سمیت وارڈز اور دیگر شعبہ جات کو تالے لگ گئے میڈیکل کمپلیکس کی انتظامیہ اور ڈاکٹروں کی ہٹ دھرمی کی سز اعوام بھگتنے پر مجبورغریب مریض طبی سہولیات کے حصول کیلئے رُ لنے لگے بعض مریض تو بروقت طبی سہولیات نہ ملنے سے جان کی بازی ہار گئے صوبائی حکومت قاضی میڈیکل کمپلیکس میں عوام کو طبی سہولیات کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائیں بصورت دیگر نوشہرہ کے عوام نے قاضی میڈیکل کمپلیکس انتظامیہ کی ہٹ دھرمی کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے کی دھمکی دے دی اس سلسلے میں نوشہرہ کے ممتاز سماجی رہنما ملک یحیےٰ خان نے نوشہرہ میں میڈیا کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ 23اپریل کو میرے جواں سالہ بیٹے ملک جانباز خان نے زہریلی گولیاں کھائی تھی جس کو علاج کی غرض سے نوشہرہ قاضی میڈیکل کمپلیکس لے کر آئے لیکن قاضی میڈیکل کمپلیکس میں انتظامیہ اور ڈاکٹروں کے مابین اختیارات کی رسہ کشی جاری تھی اور میڈیکل کمپلیکس میں معدہ واش کرنے کی کوئی سہولت بھی موجود نہیں تھی میڈیکل کمپلیکس میں موجود ڈسپنسرز نے ہمیں پشاور کرنے کیلئے ریفر چیٹ دے دی جو کسی کام نہ آسکی اور میرا بیٹا راستے میں ہی دم توڑ گیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...