مردان میں نجی سکولز ریگولرٹی اتھارٹی بل عدالت میں چیلنج

مردان میں نجی سکولز ریگولرٹی اتھارٹی بل عدالت میں چیلنج

مردان(بیورورپورٹ ) پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن نے نجی سکولز ریگولرٹی اتھارٹی بل کو مسترد کرتے ہوئے اسے عدالت میں چیلنج کرنے کا اعلان کیاہے اور قراردیاہے کہ حکومتی اقدامات دراصل ریگولرٹی اتھارٹی بل نہیں بلکہ 27ہزار پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو سُولی پر چڑھانے کے مترادف ہے ان خیالات کا اظہار پرائیویٹ سکولزلز مینجمنٹ ایسوسی ایشن ضلع مردان کے صدر نصیر آفریدی نے کابینہ کے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا جواس بل پر غور کے لئے طلب کیاگیاتھا اجلاس میں ایسوسی ایشن کے ضلعی جنرل سیکرٹری تاج ملوک، سینئر نائب صدر طفیل احمد مایار، محمد افتحار ،ترجمان سید ندیم شاہ کے علاوہ تمام زونل صدور نے شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے نصیر آفریدی اوردیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ تعلیم دشمن بل کو کسی صورت تسلیم نہیں کرینگے انہوں نے کہاکہ مہذب دنیا میں ایسے قانون کا تصور نہیں کیا جا سکتا جہاں سٹک ہولڈرز کو شامل مشاورت نہ کیاجائے یا ان کو اعتماد میں نہ لیا جائے مقررین نے کہاکہ ہم اس تعلیم دُشمن بل کی بھر پور مذمت کرتے ہیں اور اس کو عدالت عظمیٰ میں چیلنج کرینگے اجلاس میں یہ بھی فیصلہ ہو اکہ ہم اپنے صوبائی تنظیم کے ساتھ اس تعلیم دشمن بل کے خلاف تحریک میں شانہ بشانہ کھڑے رہیں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...