ننگر ہار میں نان نیوکلیئر بم گرانا امریکا داعش کی مشترکہ کارروائی تھی: حامد کرزئی

ننگر ہار میں نان نیوکلیئر بم گرانا امریکا داعش کی مشترکہ کارروائی تھی: حامد ...
ننگر ہار میں نان نیوکلیئر بم گرانا امریکا داعش کی مشترکہ کارروائی تھی: حامد کرزئی

  


واشنگٹن (اے این این) افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی نے کہا ہے کہ داعش حقیقت میں امریکا کی پیداوار ہے، ننگرہار میں مدرآف آل بمبز گرانا بھی امریکا اور داعش کی مشترکہ کارروائی تھی۔ ایک امریکی ٹی وی کو انٹرویو میں سابق افغان صدر کا کہنا تھا کہ انہیں مسلسل اطلاعات مل رہی ہیں کہ بغیر شناخت والے ہیلی کاپٹر پاک افغان سرحد کے قریب سپلائی بیگز گرار ہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جنگجوﺅں کے اثرورسوخ والے علاقوں میں مشکوک ہیلی کاپٹروں کی جانب سے سپلائی کا پہنچنا ایسا عمل ہے جس کا جواب امریکا کو ضرور دینا ہو گا۔ حامد کرزئی نے امریکا کی جانب سے دنیا کے سب سے بڑے بم گرائے جانے کو بھی داعش اور امریکا کی مشترکہ کارروائی قرار دیا ہے ۔ انہوں نے سوال کیا کہ ایسا کیوں ہوا کہ حملے سے پہلے بیشتر داعش جنگجوﺅں نے خاندان سمیت علاقہ خالی کر دیا تھا۔

حسن روحانی کو فوج نے گفتگو سے روک دیا

مزید : بین الاقوامی


loading...