’میں خود جان بوجھ کر ہر ہفتے 30 شہد کی مکھیوں سے اپنی کمر پر ڈنگ مرواتی ہوں تاکہ۔۔۔‘ خاتون نے اس خطرناک عادت کی ایسی وجہ بتادی کہ جان کر ڈاکٹر بھی دنگ رہ جائیں

’میں خود جان بوجھ کر ہر ہفتے 30 شہد کی مکھیوں سے اپنی کمر پر ڈنگ مرواتی ہوں ...
’میں خود جان بوجھ کر ہر ہفتے 30 شہد کی مکھیوں سے اپنی کمر پر ڈنگ مرواتی ہوں تاکہ۔۔۔‘ خاتون نے اس خطرناک عادت کی ایسی وجہ بتادی کہ جان کر ڈاکٹر بھی دنگ رہ جائیں

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) اگرچہ لائم (Lyme)نامی بیماری کا علاج اینٹی بائیوٹکس کے ذریعے ممکن ہے لیکن برطانیہ میں ایک خاتون نے اس بیماری کا ایسا طریقہ علاج اپنا رکھا ہے کہ جان کر آپ ششدر رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 36سالہ انگریڈ واٹ نامی یہ خاتون کئی سالوں سے لائم کی مریض ہے اور اس کے علاج کے طور پر وہ خود کو شہد کی مکھیوں سے کٹواتی آ رہی ہے۔ وہ ہفتے میں 30بار خود کو مکھیوں سے کٹواتی ہے اور اس سلسلے میں اپنے شوہر ڈیرین کی خدمات حاصل کرتی ہے جو ایک چمٹی سے مکھیوں کو پکڑ کر انگریڈ کی پشت پر لگا دیتا ہے اور مکھی وہاں کاٹ لیتی ہے۔

’میں چھٹیوں پر گئی تھی، واپس آئی تو ٹانگ پر یہ نشان پڑا ہوا تھا، ڈاکٹر کو دکھایا تو اس نے کہا کہ یہ نیل نہیں بلکہ جیتا جاگتا۔۔۔‘ خاتون نے اپنی ٹانگ پر نشان کے پیچھے چھپی ایسی وجہ بتادی کہ جان کر آپ کے بھی رونگٹے کھڑے ہوجائیں گے

رپورٹ کے مطابق انگریڈ کا کہنا ہے کہ ”مکھیوں کے زہر سے اس کے مرض کی علامات کم ہو جاتی ہیں اور اگر اس طرح مجھے اس مرض سے نجات مل جائے تو مکھیوں کے کاٹے سے ہونے والا درد کوئی بڑی بات نہیں ہو گی۔ میں کئی سالوں سے یہ طریقہ علاج اپنائے ہوئے ہوں اور اب خود کو بہت حد تک صحت مند محسوس کرتی ہوں۔“واضح رہے کہ لائم نامی یہ بیماری دراصل انفیکشن کی ایک قسم ہے جو بیکٹیریا سے لاحق ہوتی ہے۔ جسم پر سرخ دانے، پٹھوں میں درد، سر درد، تھکاوٹ اور بخار ہونا اس کی بڑی علامات ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...