کسان اتحاد کاگندم کی خریداری مہم کے بائیکاٹ ، پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنے کا اعلان ، پولیس کے ناکے، گرفتاریاں شروع

07 مئی 2018 (13:01)

ملتان (ویب ڈیسک) پاکستان کسان اتحاد نے گندم کی خریداری مہم کا مکمل بائیکاٹ اور پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان کیا ہے۔

ملتان سمیت جنوبی پنجاب سے کسانوں کا لاہور کی جانب مارچ، پولیس کے ناکے، گرفتاریان کا عمل شروع کردیا ہے، پاکستان کسان اتحاد کے مرکزی صدر خالد کھوکھر نے میڈی اسے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گنا کے بعد گندم خریداری مہم میں کسانوں کو بری طرح سے نظر انداز کیا جارہا ہے۔

کاشتکاروں کو محض 80 بوری دی جارہی ہے اور گندم کی خریداری ہدف کو 40 لاکھ میٹرک ٹن سے کم کرکے 20 لاکھ میٹرک ٹن کردیا گیا ہے۔ مسائل کو فوری حل کرنے کے لئے پاکستان کسان اتحاد نے گندم خریداریمہم کے مکمل بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے اور صوبہ بھر سے کسان لاہور پہنچ کر پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا دیں گے۔ گزشتہ روز ملتان سے 20 بسوں کا قافلہ لاہور کے لئے رووانہ ہوگیا۔

قیادت کے مطابق مختلف شہروں سے 200 بسیں کسانوں کو لے کر لاہورپہنچ رہی ہیں۔ پولیس نے راتسے میں رکاوٹیں کھڑی کرکے گرفتاری کا کام شروع کردیا ہے۔ خالد کھوکھر نے کسانوں کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت پنجاب جان بوجھ کر حالتا خراب کررہی ہے۔

مزیدخبریں