جعلی اکاﺅنٹس کیس ،ملزموں کی عبوری ضمانت درخواست پر نیب مہلت کی استدعا منظور

  جعلی اکاﺅنٹس کیس ،ملزموں کی عبوری ضمانت درخواست پر نیب مہلت کی استدعا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں ) اسلام آباد ہائی کورٹ میں جعلی بینک اکاو¿نٹس میں ملزمان سہیل احمد ،میرمحمد ، علی محمد شاہ ،علی گل خاور کی درخواست کی عبوری ضمانت کی د ر خو ا ست پر کیس کی سماعت جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی نے کی۔ دور ان سماعت پراسیکیو ٹر نیب سردار مظفر عباسی نے جواب جمع کرانے کےلئے عدالت سے مہلت مانگ لی جسے عدالت نے منظور کرتے ہوئے کیس کی سماعت 22 مئی تک ملتوی کردی۔دوسری طرف جعلی بینک اکاﺅنٹس کیس میں احتساب عدالت نے ڈاکٹرڈنشاہ،جمیل بلوچ اورندیم بھٹوکے جسمانی ر یما نڈ میں توسیع کردی، پیر کو جعلی بینک اکاﺅنٹس میں نیب نے ملزموں کو احتساب عدالت میں پیش کیااورپراسیکیوٹر نے انکے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روزکی توسیع کی استدعا کرتے ہوئے بتایا دوران تفتیش ملزمان نے اہم انکشافات کیے،مزید ریکارڈ ریکورکرنا ہے۔ڈاکٹرڈنشا کے وکیل نے جسمانی ریمانڈ کی مخا لفت کرتے ہوئے کہا نیب بدنیتی سے کام لے رہا ہے۔ڈاکٹر ڈنشاہ گلیکسی انٹرنیشنل کے ایک ڈائریکٹر ہیں ،کمپنی کے با قی ڈائریکٹر اور بورڈ آ ف گورنرز کے ممبرز کہاں ہیں؟انہیں کیوں ملزم نامزد نہیں کیا گیا؟ان کے موکل پڑھے لکھے شریف آدمی ہیں،وہ تحقیقا ت میں مکمل تعاون کر ر ہے ہیں۔عدالت نے دلائل سننے کے ڈاکٹرڈنشاہ،جمیل بلوچ کے جسمانی ریمانڈ میں 10 روزاور ندیم بھٹو کے جسما نی ریمانڈ میں 7 روز کی توسیع کرتے ہوئے آئندہ سماعت پردوبارہ پیش کرنے کا حکم دےدیا۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے جعلی اکاو¿ نٹس کیس کے چوتھے ریفرنس میں تمام ملزمان کو سمن جاری کر دیئے ۔ پیر کو کیس کی سماعت احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے کی ۔ ملزم حسن علی کو پولیس کی حراست میں عدالت کے روبرو پیش کیا گیا ، ر یفر نس میں نامزد تمام 13 ملزمان کو عدالت کی جانب سے سمن جا ری کر د ئیے گئے۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر تمام ملزمان کو پیش ہونے کا حکم دیا ۔ دور ان سماعت نیب کی جانب سے پراسیکیوٹر اصغر اعو ا ن پیش ہو ئے ۔ احتساب عدالت نے خواجہ عبد الغنی مجید ، منہا ل مجید،سابق سیکرٹری اعجاز احمد،حسن علی میمن،علی اکبرابڑو ،اعجاز میمن اور اطہر نو از درانی سمیت کل 13 ملزمان کو 20 مئی کو طلب کر لیا ۔ ملز مان پرغیر قانونی طریقے سے سندھ حکومت سے کنٹریکٹ لینے کا الزام ہے ۔
جعلی اکاﺅنٹس کیس

مزید :

صفحہ آخر -