لوگوں کا جب ہم پر اعتماد نہیں ہوگا تو عدالتوں کا کوئی فائدہ نہیں ،جسٹس اطہر من اللہ

  لوگوں کا جب ہم پر اعتماد نہیں ہوگا تو عدالتوں کا کوئی فائدہ نہیں ،جسٹس اطہر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد(آئی این پی ) اسلام آباد ہائی کورٹ نے ڈسٹرکٹ کورٹ کی عدالتوں کوالگ کرنے سے متعلق کیس میں سیکرٹریزداخلہ، قانون، خزانہ، پلاننگ کوطلب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر کو رپورٹ جمع کرانے کے احکامات دیدئےے ، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریمارکس دئےے کہ اسلام آباد کے لوگوں کے لیے عدالتی ماڈل نظام ہونا چاہیے۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ڈسٹرکٹ کورٹ کی عدالتوں کوالگ کرنے سے متعلق کیس پرسماعت کی۔عدالت نے ریمارکس دئےے کہ وزارت داخلہ عدالتوں کومناسب جگہ منتقل کرنے میں ناکام ہے، وزارت داخلہ کی بلڈنگ کوڈسٹرکٹ کورٹ کی جگہ منتقل کرنے کا حکم دیا جائے؟۔اکرم چوہدری نے عدالت کو بتایا کہ سی ڈی اے ماسٹرپلان میں ڈسٹرکٹ، ہائیکورٹ کے پلاٹ ہی نہیں ہیں۔چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دئےے کہ جب لوگوں کا ہم پراعتماد نہیں ہوگا توعدالتوں کا فائدہ نہیں، اسلام آباد کے لوگوں کے لیے عدالتی ماڈل نظام ہونا چاہیے۔عدالت نے آئندہ سماعت میں سیکرٹریزداخلہ، قانون، خزانہ، پلاننگ کوطلب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر کو رپورٹ جمع کرانے کے احکامات دئےے۔بعدازاں اسلام آباد ہائی کورٹ نے ڈسٹرکٹ کورٹ کی عدالتوں کوالگ کرنے سے متعلق کیس پرسماعت 2ہفتے کے لیے ملتوی کردی۔
جسٹس اطہرمن اللہ

مزید :

صفحہ آخر -