پنجاب ‘ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں سفارشی آفیسرز بھرتی ‘ نیا پینڈورا باکس اوپن

پنجاب ‘ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں سفارشی آفیسرز بھرتی ‘ نیا پینڈورا باکس اوپن

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان (سپیشل رپورٹر) پنجاب بھر میں بھرتیوں پر پابندی کے باوجود ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں سفارشی آفیسران کی بھرتی کے خلاف سابق جنرل سیکرٹری ایمپلائز ویلفیئر یونین نے ڈپٹی (بقیہ نمبر45صفحہ12پر )


کمشنر ملتان سے ملازمین کی تنخواہیں روکنے اور سابق تنخواہیں واپس لیکر خزانے میں جمع کرانے کا مطالبہ کردیا ہے۔ جنرل سیکرٹری ایمپلائز ویلفیئر یونین چوہدری جاوید اقبال نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار، ڈپٹی کمشنر عبدالعامر خٹک اور وزیراعلیٰ انسپکشن ٹیم کو دی جانیوالی درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ پنجاب حکومت کے نوٹیفکیشن نمبر 6-71/2018kسمیت دو مزید نوٹیفکیشن کے مطابق پنجاب بھرمیں بھرتیوں پر پابندی عائد کررکھی تھی، ویسٹ مینجمنٹ کمپنی نے بھرتی پر پابندی کے باوجود نئے آفیسران بھرتی کئے گئے یہ آفیسران دیگر شہروں سے بلا کر بھرتی کئے گئے ہیں مذکورہ آفیسران سابقہ اداروں سے کرپشن پر نکالے گئے ہیں، آفیسران کو 3ماہ کے کنٹریکٹ پر بھرتی کیا گیا تھا جو کہ ختم ہو چکا ہے جبکہ کنٹریکٹ میں توسیع کو آفیسران کی کارکردگی سے مشروط کیا گیا، پروکیورمنٹ منیجر سمیت دیگر آفیسران کو شوکاز نوٹس بھی دیا گیا ہے ، کارکردگی درست نہ ہونے کی وجہ سے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے ان آفیسران کے کنٹریکٹ میں توسیع کی منظوری نہیں دی۔ انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ماہ دسمبر 2018میں آفیسران کی بھرتیوں پر آزادانہ انکوائری کروائی جائے اور بھرتیوں کو کالعدم قرار دیا جائے اور تنخواہیں واپس لیکر قومی خزانے میں جمع کرائی جائے۔ 
مطالبہ ‘ تنخواہ