بھارت ر مضان کے آغاز پرکشمیری سیاسی قیدیوں کو رہا کرے،شوبز شخصیات

بھارت ر مضان کے آغاز پرکشمیری سیاسی قیدیوں کو رہا کرے،شوبز شخصیات
بھارت ر مضان کے آغاز پرکشمیری سیاسی قیدیوں کو رہا کرے،شوبز شخصیات

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
لاہور ( فلم رپورٹر) شوبزکے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات کا کہنا ہے کہ ہم مقبوضہ کشمیر کی آزادی جدوجہد کرنے والے مظلوموں کے ساتھ ہیں بھارتی حکومت کور مضان المبارک کے آغاز پر مختلف جیلوں میںنظربندتمام سیاسی قیدیوںاور نوجوانوںخاص طورپر گزشتہ چند دنوں کے دوران جنوبی کشمیرمیں گرفتار کئے گئے کشمیریوںکی غیر مشروط رہاکردینا چاہیے۔شوبز شخصیات کا کہنا ہے کہ کشمیر پرقابض انتظامیہ جبری نظربندیوںکا سلسلہ ترک کرتے ہوئے رمضان المبارک کے مقدس مہینے کے آغاز پر تمام سیاسی نظربندوں کو رہا کرے۔ سیاسی نظربندوں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے اور ان کے جذبہ حریت کو کمزور کرنے کیلئے ان کی غیر قانونی نظربندی کو طول دیاجارہا ہے ۔ بھارت ان اوچھے ہتھکنڈوں کے ذریعے کشمیریوں کے جذبہ حریت کو توڑنے میں ناکام رہے گا اور کشمیری نظربندوں نے جیلوں میںزبردست صبر و استقامت کا مظاہرہ کیا ہے ۔خرم شیراز ریاض ،شاہد حمید،معمر رانا،مسعود بٹ،حسن عسکری ،شانسید نور،میلوڈی کوئین آف ایشیاءپرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،انیس حیدر،ہانی بلوچ،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن ،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا آفتاب،حنا ملک،انعام خان ،فانی جان،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاںراشد فرزند،سدرہ نور،نادیہ علی،شین،سائرہ نسیم،صبا ءکاظمی، ،سٹار میکر جرار رضوی،آغا حیدر،دردانہ رحمان ،ظفر عباس کھچی ،سٹار میکر جرار رضوی ،ملک طارق،مجید ارائیں،طالب حسین،قیصر ثنا ءاللہ خان ، مایا سونو خان،عباس باجوہ،مختار چن،آشا چوہدری،اسد مکھڑا، وقا ص قیدو، ارشدچوہدری،چنگیز اعوان،حسن مراد،حاجی عبد الرزاق،حسن ملک،عتیق الرحمن ،اشعر اصغر،آغا عباس،صائمہ نور،خالد معین بٹ ،مجاہد عباس،ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل ملک،کوریوگرافر راجو سمراٹ،صومیہ خان،حمیرا چنا ، اچھی خان،شبنم چوہدری،محمد سلیم بزمی،سفیان ،انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین،فیاض علی خاں،پروڈیوسر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس،پرویز کلیم اور نجیبہ بی جی نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب کشمیر کی سرزمین پر آزادی کا پرچم لہرائے گا۔نریندر موودی کے مظالم کا خاتمہ جلد ہونے والا اس کو تاریخ ایک ظالم اور جابر حکمران کے طور پر یاد رکھے گی۔

مزید :

کلچر -