جولائی میں کورونا عروج پر ہونے کا خدشہ، عوام ایس او پیز پر عمل کریں: وزیر داخلہ

  جولائی میں کورونا عروج پر ہونے کا خدشہ، عوام ایس او پیز پر عمل کریں: وزیر ...

  

ننکانہ صاحب(مانیٹرنگ ڈیسک،نمائندہ خصوصی) وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ جولائی کے پہلے ہفتے میں کورونا وائرس عروج پر ہوگا، عوام کو حکومت کے جاری کردہ ایس او پیز پر عمل کرنا چاہیے۔ وزیراعظم لاک ڈاؤن کے نقصانات سے مکمل آگاہ ہیں۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ڈپٹی کمشنر آفس ننکانہ صاحب کے کمیٹی روم میں ٹائیگر فورس اور کورونا وائرس کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرڈپٹی کمشنر ننکانہ صاحب راجہ منصور احمد،ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر اسماعیل الرحمن کھاڑک،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (ریونیو) محمد عثمان خالد،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(جنرل) احمد کمال،تینوں تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز،چیف ایگزیکٹو آفیسر(ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی) جاوید اقبال بابر، پاکستان تحریک انصاف کے ضلعی و رہنما و سابق تحصیل ناظم ننکانہ شہزاد خالد خاں المعروف مون خاں،ضلعی صدر پی ٹی آئی پیر سرور شاہ سمیت دیگر اداروں کے افسروں نے شرکت کی اس موقعہ پر ڈپٹی کمشنر راجہ منصور احمد اور ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر اسماعیل الرحمن کھاڑک نے وفاقی وزیر داخلہ پیر اعجاز احمد شا ہ کو کورونا وائرس اور ٹائیگر فورس کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ وزیراعظم کو اپنے عوام کی بہت فکر ہے، پاکستان میں کورونا وائرس سے زیادہ غربت کا ڈر ہے،ٹائیگرز قومی فرض سمجھتے ہوئے اپنی ذمہ داریاں ادا کریں اور وزیراعظم کی توقعات پر پورا اتریں۔ ان کا کردار مکمل طور پر غیر سیاسی ہوگا۔انہوں نے کہا کہ امیر لوگ چاہتے ہیں کہ لاک ڈاؤن جاری رہے جبکہ بھوک اور ضرورت کا ستایا شخص نرمی چاہتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ 20 نکاتی ایجنڈا علما کی مشاورت سے طے کیا گیا، وہ حکومتی ہدایات پر عملدرآمد کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔ تمام تہواروں پر حکومتی ہدایات پر عملدرآمد کرنے کی ضرورت ہے،ضلعی افسران بلا امتیاز حکومتی ہدایات پر عملدرآمد کروائیں۔ قوم سے درخواست ہے کہ وہ حفاظتی انتظامات پر مکمل عملدرآمد کریں۔وفاقی وزیر داخلہ نے کہاکہ مخیرحضرات مستحق افراد کی مددکیلئے آگے آئیں۔انہوں نے اپیل کی کہ مسجد میں کم سے کم لوگ اعتکاف کریں جبکہ رمضان المبارک کے آخری عشرے کے لیے کوئی نیا ضابطہ اخلاق جاری نہیں کیا جائے گا،نماز عید کیلئے علماء متفق ہیں کہ مساجد کی بجائے کھلی جگہوں پر نمازعید ادا کی جائے۔انہوں نے کہا کہ اگر پاکستان سے کرپشن ختم ہوجائے تو ترقی کرنے میں پوری دنیا پاکستان کا مقابلہ نہیں کرسکتی۔بعدازاں وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈئیر(ر) پیر اعجاز احمد شاہ نے ڈپٹی کمشنر راجہ منصور احمد اور ڈی پی او اسماعیل الرحمن کھاڑک سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسران کے ہمراہ بابا گورونانک انٹرنیشنل یونیورسٹی کے جاری تعمیراتی کام کا جائزہ لینے کے حوالے سے یونیورسٹی کا دورہ کیا اور کام کی کوالٹی اور معیار کو چیک کیا۔

وفاقی وزیر داخلہ

مزید :

صفحہ اول -