اقلیتی کمیشن میں احمد یوں کی شمالیت، کابینہ کی اکثریت مخالف: نور الحق قادری

  اقلیتی کمیشن میں احمد یوں کی شمالیت، کابینہ کی اکثریت مخالف: نور الحق قادری

  

اسلام آباد (آئی این پی)وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی کابینہ کی اکثریت نے قومی اقلیتی کمیشن میں احمدیوں کے نمائندے کی شرکت کی مخالف کی، 5یا6ارکان نے احمدیوں کے نمائندے کو قومی اقلیتی کمیشن میں شامل کرنے کی حمایت کی تھی، یہ معاملہ کابینہ میں زیر بحث آیا،تاہم کابینہ کی اکثریت نے اس کی مخالفت کی، اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا تھا، میرا یقین ہے احمدی دیگر اقلیتوں کی طرح نہیں، اسلام اور آئین پاکستان اقلیتوں کو تحفظ اور حقوق دیتا ہے، لیکن قادیانی کوئی اقلیت نہیں، قادیانی آئین پا کستان کو نہیں مانتے، انہیں حق نہیں کہ وہ کسی کمیشن (آئین پاکستان کے ذیلی ادارے)کا حصہ ہوں۔ بدھ کو ایک نجی ٹی وی کو سنسنی خیز انٹرو یو دیتے ہوئے انکامزید کہنا تھا ہم نے وفاقی کابینہ میں دو الگ الگ سمریاں بھجوائی تھیں، ایک 21اپریل جبکہ دوسری 5 مئی کو بھیجی گئی، ان میں احمدی برادری کا ذکر تک نہیں کیا گیا تھا۔قومی اقلیتی کمیشن میں احمدیوں کے نمائندے کی شمولیت کے کابینہ کے فیصلے سے متعلق خبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا وفاقی کابینہ کے پانچ، چھ ارکان نے احمدیوں کے نمائندے کو قومی اقلیتی کمیشن میں شامل کرنے کی حمایت کی تھی، یہ معاملہ کابینہ میں زیر بحث آیا تاہم کابینہ کی اکثریت نے اس کی مخالفت کی۔

نور الحق قادری

مزید :

صفحہ آخر -