حکومت مافیاز کے ہاتھوں یرغمال احساس پروگرام صرف ڈرامہ‘ ذیشان اختر

  حکومت مافیاز کے ہاتھوں یرغمال احساس پروگرام صرف ڈرامہ‘ ذیشان اختر

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)نائب امیر صوبہ جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہ حکومت اشرافیہ اور مافیاز کے ہاتھوں یر غمال ہے اس لئے آزادانہ فیصلے نہیں کرپارہی،وزیر اعظم مہنگائی کے خلاف بہت(بقیہ نمبر43صفحہ6پر)

باتیں کرتے تھے مگر اب غریب کیلئے سحری اور افطاری کا انتظام کرنا مشکل ہوچکا ہے،سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں چار چار گنا اضافہ ہوچکا ہے۔لوگ دودھ لیتے ہیں تو دہی کے پیسے نہیں ہوتے اور دہی لیتے ہیں تو دودھ کیلئے کچھ نہیں بچتا۔انہوں نے کہا کہ اب تو سحری اور افطاری کے وقت لوگوں کیلئے چائے کا کپ بنانا مسئلہ بن گیا ہے مگر حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے اور عوام کو اس مہنگائی سے نجات دلانے کیلئے کچھ کرنے کو تیار نہیں۔انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام سے ابھی تک اسلام آباد کا مزدور طبقہ لاعلم ہے۔ حکومت دعوے کررہی ہے کہ اس نے احساس پروگرام کے ذریعے اربوں روپے تقسیم کئے ہیں مگرآن گرؤنڈ صورتحال اس کے بالکل برعکس ہے اور اسلام آباد کے مزدور وں کو بھی یہ امدا دنہیں مل سکی۔ملک بھر میں لوگ دفتروں اور حکومتی پارٹی کے لوگوں کے پیچھے پیچھے خوار ہورہے ہیں،وزیر اعظم کو ٹائیگر فورس بنانے سے پہلے سوچنا چاہیے تھا کہ ٹائیگرز کو عام آدمی کیسے پکڑ سکے گا۔ اربوں روپے کہا ں تقسیم ہوئے شاید حکمران خود بھی نہ جانتے ہوں۔

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -