سینیٹرالیاس بلور کا ایس او پیز کے تحت بنکوں کی برانچوں کو کھولنے کا مطالبہ

سینیٹرالیاس بلور کا ایس او پیز کے تحت بنکوں کی برانچوں کو کھولنے کا مطالبہ

  

 پشاور(سٹی رپورٹر)یونائیٹڈ بزنس گروپ کے لیڈر اور ملک کے ممتاز صنعتکار سینیٹر الیاس احمد بلورنے وفاقی حکومت اور سٹیٹ بینک آف پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ عوام بالخصوص تاجروں اور صنعتکاروں کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک مربوط حکمت عملی اورSOPs کے تحت تمام کمرشل بینکوں کی برانچز کو کھولنے کی فوری ہدایات جاری کی جائیں تاکہ مذکورہ مخصوص بینک برانچز پر اضافی دبا کم کرنے کے ساتھ ساتھ بزنس کمیونٹی اور عوام کی مشکلات کو دور کیا جاسکے۔ ایک بیان میں ملک کے سینئر پارلیمنٹرین اور سینیٹ آف پاکستان میں عوامی نیشنل پارٹی کے سابق پارلیمانی لیڈر سینیٹر الیاس احمد بلور نے کہا کہ مخصوص بنکوں کی برانچز پر اضافی دبا کو کم کرنے کی غرض سے تمام کمرشل بینکوں کی برانچز ضروری سٹاف کے ذریعے کھول دیا جائے تاکہ سیکورٹی رسک اور رش کو کم کرنے کے ساتھ ساتھ ٹریفک کی روانی کو برقرار رکھنے فضائی آلودگیٹائم کے ضیاع اور کورونا وائرس کے پھیلا جیسے مسائل پر بچایا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ مخصوص کمرشل بینکوں کی برانچز کے کھلنے پر زیادہ دبا ہوتا ہے جس کے باعث بنکوں کے باہر یوٹیلٹی بلز کمرشل ڈیپازیٹرز صارف جیسے کہ ہسپتالپلازوں تیل پمپز وغیرہ جو کہ سیکورٹی رسک رقم کے چھیننے زیادہ رش ٹریفک میں اضافہ فضائی آلودگی اور شور وقت کا ضائع اور کورونا کے پھیلا کے خدشات بڑھانے کے خطرات ہر وقت رہتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اس کے علاوہ بنکوں کے باہر لڑائی جھگڑے کے واقعات بھی رونما ہو رہے ہیں۔ انہوں نے حکومت اور اسٹیٹ بینک آف پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ موجودہ صورتحال کے پیش نظر مخصوص برانچز کی بجائے کمرشل بینکوں کی تمام برانچز کو کھلنے کے احکامات جاری کئے جائیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -