بند بوس ملتان: ایک ہی خاندان کے   5افراد دریائے چناب میں ڈوب کر جاں بحق 

بند بوس ملتان: ایک ہی خاندان کے   5افراد دریائے چناب میں ڈوب کر جاں بحق 

  

ملتان (نیوز رپورٹر)ایک ہی خاندان کے پانچ افراد ایک دوسرے کو بچاتے ہوئے دریا میں ڈوب گئے ملتان کے نواحی علاقہ فلڈ بند بوسن بستی دوآبہ میں گندم کی کٹائی کے بعد دریائے چناب میں نہانے والی دو خواتین اور ایک بچی ڈوب گئیں جنہیں بچانے کے لیے ان کے دو بھائی دریا میں کودے تو وہ بھی ڈوب گئے اس واقعے کے فوراً بعد پولیس کی بھاری نفری ریسکیو 1122 کی ٹیمیں موقع پر پہنچ گیئں جنہوں نے ڈوبنے والے افراد کے لاشوں کی تلاش شروع کر دی ہے تفصیل کے مطابق گزشتہ روز بستی دوآبہ میں محمد فاروق، ساجد علی، رقیہ بی بی،شہزادی اور فریحہ بی بی  گندم کی کٹائی کر رہے تھے جن کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ انھیں روزہ بھی تھا گندم کی کٹائی کے بعد رقیہ بی بی،18 سالہ  شہزادی اور 12 سالہ  فریحہ بی بی دریائے چناب میں نہانے لگ گیئں اور دریا کے ایک گہڑے میں ڈوب گئیں جنہیں بچانے کے لیے محمد فاروق،اور ساجد دریا میں کودے اور وہ بھی ان بچیوں اور خواتین کو بچاتے ہوئے ڈوب گئے آخری اطلاعات آنے تک مور پکھی واس خاندان کے بیشتر افراد اور ریسکیو کی ٹیموں کے ذریعے لاشوں کی تلاش کے لیے سرچنگ کا عمل جاری تھا۔ادھراس دوران فاروق نامی نوجوان کی لاش نکال لی گئی ہے ڈپٹی کمشنر عامر خٹک کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر صدر شہزادمحبوب جائے حادثہ  پر موجود ایمرجنسی آفیسر آپریشنز ڈاکٹر کلیم اللہ آپریش کی نگرانی کر رہے ہیں ڈوبنے والوں میں چار بہن بھائی اور ایک کزن شامل ہیں بہن بھائیوں میں رقیہ کی عمر16 سال،شہزادی13سال،فریحہ8 سال اور فاروق کی عمر18 سال ہیڈوبنے والے ماجد کی عمر  13 سال ہے ڈوبنے والے افراد چونگی نمبر6 ملتان کے رہائشی ہیں بہن بھائی گندم کی فصل کی کٹائی کے لئے بند بوسن گئے ہوئے تھے:پانچوں افراد نہانے کے لئے گہرے پانی میں اترے جس کی وجہ سے یہ دالخراش واقعہ پیش آیا ریسکیو حکام کے مطابق ڈوبنے والے تمام افراد کی لاشیں ملنے تک آپریشن جاری رہے گا۔

جاں بحق

مزید :

صفحہ اول -