وفاق بینظیر انکم سپور ٹ فنڈ کے علاوہ عوام کو کوئی امدادی نہیں دے سکی: بلاول بھٹو

وفاق بینظیر انکم سپور ٹ فنڈ کے علاوہ عوام کو کوئی امدادی نہیں دے سکی: بلاول ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر)آج پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ویڈیو لنک کے ذریعے پیپلز ڈاکٹرز فورم کے عہدیداروں سے خطاب کیا جن میں سینئر ڈاکٹر کریم خواجہ، کے پی کے صدر پروفیسر ڈاکٹر نثار خان، پنجاب کے صدر ڈاکٹر ضیام، سندھ کے صدر ڈاکٹر رزاق شیخ اور ڈاکٹر داؤد، ڈاکٹر عاشق حسین، افضل آبرو اور ڈاکٹر سید مراد علی ترمذی بھی شامل تھے، چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ڈاکٹروں کی خدمات کو سراہا اور کہا کہ ان کی خدمات کو دہشت گردی کے خلاف لڑنے والے سپاہیوں کی طرح تسلیم کرتے ہیں، انہوں نے کہا کہ سندھ کیلئے ریلیف پیکیج بل لا رہے ہیں جس میں عوام کو بجلی اور گیس کے بلوں میں رعایت، سکول کے فیسوں میں کمی، نوکری اور تنخواہ کی ضمانت اور صوبائی ٹیکسوں میں کمی شامل ہے، وفاقی حکومت نہ صرف خود امدادی پیکیج دینے میں ناکام رہی بلکہ وہ سندھ حکومت کے راستے میں بھی رکاؤٹیں پیدا کر رہے ہیں صرف بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے فنڈ تقسیم کیے جا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ ہم نہ صرف سندھ کیلئے بلکہ سارے صوبوں کیلئے ریلیف چاہتے ہیں انہوں نے مزید ٹیسٹ کٹس فراہم کرنے کا مطالبہ کیا، انہوں نے پی ڈی ایف کا شکریہ ادا کیا کہ وہ کورونا کے خلاف جنگ میں برابر کے شریک ہیں، اور عوام کی خدمت کر رہے ہیں انہوں نے مشورہ دیا کہ پی ڈی ایف عوام میں اس بیماری کے بارے میں شعور پیدا کریں اور ان کو احتیاطی تدابیر کے بارے میں آگاہی دیں۔ پروفیسر ڈاکٹر نثار خان صدر کے پی کے نے چیئرمین کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ڈاکٹروں کے مسائل میں دلچسپی لی، اور ان کیلئے مراعات کا وعدہ کیا، ڈاکٹر نثار خان نے ڈاکٹروں میں کورونا کی بیماری کے بڑھنے پر تشویش کا اظہار کیا اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ کے پی کے میں اس وباء کو مزید بڑھنے سے روکا جائے، اور ان کو حفاظتی کٹس دیئے جائیں انہوں نے سندھ حکومت کی تعریف کی کہ ان کے بروقت اقدامات سے کورونہ کی بیماری کو کافی حد تک کنٹرول کیا گیا، انہوں نے مزید مطالبہ کیا کہ لاک ڈاؤن کو مزید دو ہفتے تک وسعت دی جائے۔

مزید :

صفحہ اول -