ڈاکٹر فرقان کی ہلاکت، غفلت برتنے والے ڈاکٹر کو سزا مل گئی

ڈاکٹر فرقان کی ہلاکت، غفلت برتنے والے ڈاکٹر کو سزا مل گئی

  

کراچی(ویب ڈیسک) ریڈیولوجیسٹ ڈاکٹر فرقان الحق کے انتقال کے معاملے پر انکوائری مکمل ہونے کے بعد محکمہ صحت سندھ نے غفلت برتنے والے ڈاکٹر جگدیش کمارکومعطل کردیا۔سیکریٹری ہیلتھ سندھ نے سول ہسپتال کے ڈاکٹرجگدیش کی معطلی کا نوٹیفکیشن جاری کردیا اور انہیں ہیڈکوارٹرز رپورٹ کرنے کا حکم دے دیا۔اس سے قبل وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بتایا تھا کہ ریڈیولوجیسٹ ڈاکٹر فرقان الحق کے انتقال کے معاملے پر انکوائری مکمل ہوگئی ہے اور رپورٹ کے مطابق سزائیں دینے کا عمل شروع ہے۔

ہم نیوز کے مطابق تین رکنی کمیٹی اس معاملے کی تحقیقات کر رہی تھی۔ سول ہسپتال کراچی کےڈاکٹر جگدیش پر لاپرواہی برتنے کا الزام لگایا گیا تھا کیوں کہ انہوں نے وینٹی لیٹر موجود ہونے کے باوجود ڈاکٹر فرقان کو دوسرے ہسپتال جانے کا کہا۔

چینل ذرائع کے مطابق ڈاکٹر فرقان الحق کورونا کے علاو¿ہ ہیموفیلیا اور امراض قلب میں بھی مبتلا تھے اور انہوں نے سندھ ریسکیو اینڈ میڈیکل سروسز سے پہلا رابطہ صبح 9 بجکر 5 منٹ پرکیا۔پہلی کال میں ڈاکٹر فرقان نے انڈس ہسپتال منتقلی کی خواہش ظاہر کی اور 9:54 منٹ پردوبارہ کال میں ڈاکٹرفرقان الحق نےایس آئی یوٹی جانےکی خواہش ظاہرکی تھی۔

دوبارہ کال میں ڈاکٹر فرقان نے کہا کہ سول ہسپتال میں بات کرلی ہے، ڈاکٹر فرقان نے10بجے تیسری کال میں ڈاکٹر سلمان کاحوالہ بھی دیا تھا۔ذرائع کے مطابق ڈاکٹر سلمان ای آر سول میں ہوتے ہیں اور 10:10منٹ پرڈاکٹرفرقان خود ایمبولینس میں بیٹھے تھے اور اہل خانہ میں سے کوئی ان کے ساتھ موجود نہیں تھا۔

اطلاعات ہیں کہ سندھ ریسکیو اینڈ میڈیکل سروسز کے کمانڈ اینڈ کنٹرول نے ڈاکٹر سلمان سے رابطہ کیا جس میں سول ہسپتال کے ذریعے ایس آئی یوٹی منتقل کرنے کے متعلق بات ہوئی۔ڈاکٹرفرقان سول ہسپتال پہنچنے تو ہسپتال انتظامیہ نے جگہ نہ ہونے کےباعث انکارکردیا تھا ڈاکٹرفرقان الحق سول ہسپتال سے واپسی گلشن اقبال میں گھر چلے گئے تھے۔گھر پہنچنے کے بعد ڈاکٹر فرقان کی حالت بگڑنا شروع ہوگئی تھی اور ان کے اہل خانہ نے پرائیویٹ ہسپتال منتقل کرنے کی خواہش ظاہر کی جس کے ساتھ ڈاکٹر فرقان وابستہ رہے چکے تھے۔

ذرائع کے مطابق ایمبولینس میں ڈاکٹر فرقان کے ساتھ انکی اہلیہ بھی ہسپتال گئیں تاہم وہا پہنچنے کے بعد ہسپتال انتظامیہ نے انہیں داخل کرنے سے معذرت کرلی۔پرائیوٹ ہسپتال سے انکار کے بعد ڈاکٹر فرقان اور انکی اہلیہ گھر واپسی چلے گئے تھے سندھ ریسکیو اینڈ میڈیکل سروسز نے ڈاکٹرفرقان کوچارباراپنی سروسزفراہم کی تھیں اور اس دوران تمام قواعدوضوابط کو مد نظر رکھا گیا تھا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -