وہ ملک جہاں لاک ڈاؤن کی وجہ سے خود کشی کے رجحان میں اضافے کا خدشہ ،  ماہرین نے کورونا سے زیادہ خود سوزی کی وجہ سے ہلاکتوں کا خطرہ ظاہر کردیا

وہ ملک جہاں لاک ڈاؤن کی وجہ سے خود کشی کے رجحان میں اضافے کا خدشہ ،  ماہرین نے ...
وہ ملک جہاں لاک ڈاؤن کی وجہ سے خود کشی کے رجحان میں اضافے کا خدشہ ،  ماہرین نے کورونا سے زیادہ خود سوزی کی وجہ سے ہلاکتوں کا خطرہ ظاہر کردیا

  

سڈنی (ڈیلی پاکستان آن لائن) آسٹریلیا میں کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والے لاک ڈاؤن کے باعث خود کشی کے رجحان میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔

ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ آسٹریلیا میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے خود کشی کے رجحان میں 25 فیصد تک اضافہ ہوسکتا ہے۔

سڈنی یونیورسٹی کے برین اینڈ مائنڈ سنٹر کی جانب سے کی گئی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ آسٹریلیا میں لاک ڈاؤن کے اثرات کی وجہ سے آئندہ 5 سال میں 1500 خودکشیاں ہونے کا خدشہ ہے۔  اگر ملک میں بیروزگاری کی شرح 10 فیصد تک رہی تو خودکشیوں کے رجحان میں 25 فیصد تک اضافہ ہوگا۔ اگر آسٹریلیا میں بیروزگاری کی شرح 15 فیصد تک گئی تو خودکشیوں میں 50 فیصد اضافہ ہوجائے گا۔

ماہرین نے اپنی تحقیق میں کہا ہے کہ لاک ڈاؤن کے اثرات کی وجہ سے آسٹریلیا میں سالانہ خود کشیوں کی تعداد 3 ہزار سے بڑھ کر ساڑھے 4 ہزار تک ہوسکتی ہے، خود کشی کرنے والے افراد میں زیادہ تعداد ان نوجوانوں کی ہوگی جو بیروزگاری سے تنگ ہوں گے۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -