رحمان ملک کا یورپی یونین پارلیمنٹ کے صدر کو خط ، ایسا مطالبہ کردیا کہ ہر پاکستانی تائید کرے گا 

رحمان ملک کا یورپی یونین پارلیمنٹ کے صدر کو خط ، ایسا مطالبہ کردیا کہ ہر ...
رحمان ملک کا یورپی یونین پارلیمنٹ کے صدر کو خط ، ایسا مطالبہ کردیا کہ ہر پاکستانی تائید کرے گا 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اورسابق وزیرِداخلہ سینیٹر رحمان ملک نے صدر یورپی یونین پارلیمنٹ کو خط لکھتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان کے خلاف قرارداد واپس لی جائے جبکہ یورپی یونین کی سرزمین کو استعمال کرنے پر بھارت کے خلاف اقتصادی پابندیوں کی قرارداد لائی جائے۔

تفصیلات کے مطابق پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر رحمان ملک کا کہنا تھا کہ یورپی پارلیمنٹ کی قرارداد سے پاکستانی عوام کو انتہائی دکھ و افسوس ہوا ہے، پاکستانی عوام قرارداد کو پاکستان کی خودمختاری میں مداخلت قرار دیتی  ہے، پاکستان مخالف قرارداد امتیازی اور پاکستان کے داخلی امور میں مداخلت ہے، یورپی یونین کی قرارداد بین الاقوامی بین المذاہب ہم آہنگی کے خلاف ورزی ہے، پاکستانی عوام عیسائیت سمیت تمام مذاہب کا بہت زیادہ احترام کرتے ہیں جبکہ پاکستان میں کوئی مذہبی امتیاز نہیں پایا جاتا ۔

رحمان ملک  نےکہاکہ پاکستان میں  تمام عقائد کے لوگوں کو عبادت کرنے اور رسومات منانے کی مکمل آزادی حاصل ہے،پاکستان میں رہنے والے تمام مذاہب کے عوام اور ان کے حقوق آئین پاکستان میں محفوظ ہیں ،پاکستان میں کبھی کسی مذھب کی توہین کا واقعہ نہیں ہوا ہے،  قانون سازی اور اس پر عمل درآمد کسی بھی ملک کا حق ہے،یورپی یونین پارلیمنٹ کو پاکستان کے نمائندوں کے موقف سننے کا موقعہ ملنا چاہئے تھا، یو ای پارلیمنٹ قرارداد  لانے سے پہلے بیلجیم میں پاکستان کے سفیر کو سنتے،یورپی یونین پارلیمنٹ کہاں تھی جب ڈس انفلولیب نے پاکستان کے خلاف بھارتی پروپیگنڈے کا انکشاف کیا تھا،بھارت یورپی یونین کی سرزمین کو پاکستان کے خلاف استعمال کرتا رہا،یورپی یونین کی سرزمین کو پاکستان کیخلاف استعمال کرنے پر بھارت پر اقتصادی پابندیاں عائد کیجائے۔

سابق وزیرداخلہ سینیٹر رحمان ملک نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کورونا کے کیسز آئے روز بڑھ رہے ہیں، بھارت میں کورونا تباہی کے مناظر ہمارے سامنے ہے، کورونا کی شدت کو مدنظر رکھتے ہوئے عوام سے اپیل ہے کہ عید سادگی سے منائے،عید کے دوران عوام کورونا کیخلاف ایس او پیز پر سختی سے عمل کرے،  بھارت میں کورونا کیوجہ سے اموات اور صورتحال پر افسوس ہے،وزیراعظم مودی مقبوضہ کشمیر سے  فوری کرفیو ہٹائے تاکہ لوگ آزادانہ ہسپتال جا سکیں،مقبوضہ کشمیر میں لوگوں کو نہ ویکسین مل رہی ہیں نہ باقاعدہ علاج و ادویات،میں نے اقوام متحدہ جنرل سیکرٹری کو خط لکھا تھا کہ کورونا وائرس کی تحقیقات کرائے، معلوم ہونا چاہئے کہ کورونا وائرس قدرتی ہے یا کسی نے بنایا ہے؟ نیوزی لینڈ کی سابقہ وزیراعظم کی زیرصدارت ایک پینل بنا ہے جو کورونا پر تحقیقات کر رہی ہے،امید ہے کہ کورونا کے متعلق حقائق دنیا کے سامنے آجائے گے۔

مزید :

قومی -