ایلون مسک کے ٹوئٹر کے سب سے بڑے شیئرہولڈر بننے کے بعد سعودی کھرب پتی شہزادے الولید بن طلال کاموقف بھی آگیا

ایلون مسک کے ٹوئٹر کے سب سے بڑے شیئرہولڈر بننے کے بعد سعودی کھرب پتی شہزادے ...
ایلون مسک کے ٹوئٹر کے سب سے بڑے شیئرہولڈر بننے کے بعد سعودی کھرب پتی شہزادے الولید بن طلال کاموقف بھی آگیا
سورس: Twitter/@Alwaleed_Talal

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب کے کھرب پتی شہزادہ الولید بن طلال طویل عرصے سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر کے بڑے شیئر ہولڈرزمیں سے ایک ہیں اور گزشتہ دنوں جب دنیا کے امیر ترین شخص ایلون مسک نے ٹوئٹر کو 41ارب 39کروڑ ڈالر میں خریدنے کی پیشکش کی تو شہزادہ الولید نے ان کی یہ پیشکش مسترد کر دی تھی، تاہم اب ٹوئٹر کی فروخت کا معاہدہ طے پانے اور ایلون مسک کی طرف سے رابطہ کیے جانے کے بعد شہزادہ الولید نے ان کے ساتھ دوستی کا دم بھرتے ہوئے انہیں نیا لیڈر تسلیم کر لیا ہے۔ 

عرب نیوز کے مطابق ایلون مسک نے الولید بن طلال کو ایک ٹویٹ میں ٹیگ کرتے ہوئے ان کے ٹوئٹر میں بالواسطہ اور بلاواسطہ حصص کی حد کے بارے میں پوچھا، جس کے جواب میں شہزادہ الولید نے انہیں اپنا ’نیا دوست‘ قرار دیتے ہوئے لکھا کہ ”آپ سے رابطہ ہونے پر خوشی ہوئی۔ میرا ماننا ہے کہ آپ ٹوئٹر کے بہترین لیڈر ثابت ہوں گے اور اسے نقطہ کمال تک لیجائیں گے۔ میں اور میری کمپنی کنگڈم ہولڈنگ ٹوئٹر میں اپنی 1.9ارب ڈالر کی شراکت داری کو برقرار رکھیں گے اور اس مسحور کن سفر میں آپ کے ساتھ چلیں گے۔“

بلومبرگ کے مطابق 2015ءمیں شہزادہ الولید اور ان کی کمپنی کے حاس ٹوئٹر کے 5.1فیصد شیئرز تھے جبکہ اس وقت ان کی ملکیت کا تخمینہ 4.4فیصد لگایا جا رہا ہے۔ ایلون مسک نے 25اپریل کو ٹوئٹر کی خریداری کا معاہدہ کیا تھا۔ ٹوئٹر کی خریداری کا یہ معاہدہ 44ارب ڈالر میں طے پایا تھا۔

مزید :

عرب دنیا -