بھارت فیسبک کو ’شکائتیں ‘لگانے میں دنیا پر بازی لے گیا ،پاکستان بھی پیچھے پیچھے

بھارت فیسبک کو ’شکائتیں ‘لگانے میں دنیا پر بازی لے گیا ،پاکستان بھی پیچھے ...
بھارت فیسبک کو ’شکائتیں ‘لگانے میں دنیا پر بازی لے گیا ،پاکستان بھی پیچھے پیچھے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیو دہلی(نیوزڈیسک)بھارت نے 2014ءکی پہلی ششماہی میں فیس بک کی پانچ ہزار پوسٹس تک رسائی بند کرتے ہوئے تمام دنیا کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ بھارت نے موقف اختیار کیا ہے کہ یہ پوسٹس ’نفرتیں‘ پھیلانے کا باعث بن رہیں تھیں اس لئے بھارتی حکومت اور دیگر لوگوںنے فیس بک کو درخواست کرکے ان تک رسائی کو بھارت میں روک دیا ہے۔ترکی اور پاکستان بھی اس میں پیچھے نہیں ہے اور ترکی نے 1,893اور پاکستان نے 1,773پوسٹس تک رسائی کو بند کروایا ہے۔فیس بک کے ڈپٹی جنرل کونسل کا کہنا ہے کہ 2014ءکے پہلے چھ مہینوں میں مختلف حکومتوں کی جانب سے 34,946درخواستیں کی گئیں۔
ایک اندازے کے مطابق بھارت میں دس کروڑ سے زائد لوگ فیس بک کا استعمال کرتے ہیں ۔فیس بک انتظامیہ کا کہنا ہے کہ انہوںنے یہ تمام مواد حکومت کی درخواست اور مقامی قانون کو مدنظر رکھتے ہوئے بھارت میں ’بین‘کیا ہے۔ انتظامیہ کا مزید کہنا ہے کہ امریکہ نے کسی بھی فیس بک پوسٹ کو بند کرنے کے لئے نہیں کہا لیکن اس کی فرمائش مختلف ہے یعنی امریکہ نے فیس بک کو 15,433درخواستیں کی ہیں جن میں صارف کے ڈیٹا تک رسائی مانگی گئی ہے۔ یہ کسی بھی ملک کی جانب سے لوگوںڈیٹا تک رسائی کے بارے میں کی جانے والی سب سے زیادہ درخواست ہے۔اس معاملے میں بھار ت بھی پیچھے نہیںاور اس نے فیس بک سے 4,559لوگوں کے ڈیٹا تک اورجرمنی نے 2,537تک رسائی مانگی۔جولائی سے دسمبر 2013ءتک کے ڈیٹا کا موازنہ کیا جائے تو معلوم ہوگا کہ اس سال 26فی صد اس طرح کی درخواستوںمیں اضافہ ہوا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -