کشمیرسنٹرکے زیراہتمام شہدائے کشمیر کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے تقریب

کشمیرسنٹرکے زیراہتمام شہدائے کشمیر کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے تقریب

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(پ ر)کشمیرسنٹر لاہور کے زیراہتمام 6 نومبر1947ءکو جموں سے پاکستان کی طرف ہجرت کرنے کے دوران بھارتی اور ڈوگرہ فوجیوں کے مظالم سے شہید ہونے والے اڑھائی لاکھ کشمیریوں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کیلئے پروگرام کا انعقاد کیا گیاجس سے ممتاز کشمیری رہنمااور اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن مولانا مفتی محمدشفیع جوش‘ ڈائریکٹرکشمیرسنٹرسردارساجد محمود‘ پیپلز پارٹی آزادکشمیر لاہورسرکل کے صدرفاروق آزاد‘ آل جموں وکشمیرمسلم کانفرنس کے مرکزی نائب صدر مرزاصادق جرال‘ لاہورسرکل کے سینئرنائب صدرحاجی اقبال قریشی‘مسلم لیگ ن آزادکشمیر لاہورکے سرپرست عبداللطیف چغتائی‘ لاہورڈویژن کے جنرل سیکرٹری مرزاعامر جرال نے خطاب کیا۔ مفتی شفیع جوش نے کہا کہ 1947 ءمیں کشمیر کے صوبہ جموں سے پاکستان کی طرف ہجرت کے دوران صرف تین دنوں میں ایک ہی مقام پر اڑھائی لاکھ کشمیریوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے پاکستان کے ساتھ اپنی محبت اورعقیدت کا ثبوت پیش کیا ۔
 انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کی تحریک آزادی پاکستان کی بقاءکیلئے ہے اور اب تک لاکھوں کشمیریوں نے تکمیلِ پاکستان کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ سردارساجد محمود نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے قومی ایام منانے کامقصد نئی نسلوں کو اپنے مشاہیر کی قربانیوں سے آگاہ کرتے ہوئے یہ باورکروانا ہے کہ بھارت ان کا ازلی دشمن ہے جو کبھی پاکستان کا دوست نہیں ہوسکتا۔ مرزاصادق جرال نے کہا کہ بھارت نے ہمیشہ پاکستان کے ساتھ دھوکاکیاہے۔ اس کی تمام پالیسیاں منافقت پر مبنی ہیں ۔ ہمیں کشمیر کی آزادی کیلئے قائداعظم کے وژن پر مبنی پالیسی اختیارکرناپڑیگی۔ کشمیر کا مسئلہ حل ہواتو پاکستان کے تمام مسائل خودبخودحل ہوجائیں گے۔ فاروق آزادنے کہا کہ بھارت کشمیر پرمکمل قبضے کیلئے پاکستان کیخلاف کسی بھی وقت کچھ بھی کرسکتاہے۔ واہگہ بارڈر پر گذشتہ دنوںہونے والے بم دھماکے میں بھی بھارت ملوث ہے ۔حاجی اقبال قریشی نے کہا کہ قائداعظم نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قراردیاتھا جس کی حقیقت وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ عیاں ہورہی ہے۔ انہوںنے کہا کہ برطانیہ میں کشمیریوں نے نہایت عظیم ملین مارچ کیالیکن بھارت نوازقوتوں نے اس ملین مارچ کو سبوتاژ کرکے عالمی برادری کو گمراہ کرنے کی کوشش کی جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ عبداللطیف چغتائی نے کہا کہ کشمیر کی آزادی کیلئے ہمیں تمام نظریاتی اور سیاسی وابستگیوں سے بالاترہوکر ایک پلیٹ فارم پر متحدہوناپڑیگا۔ مرزاعامر جرال نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم پنڈت جواہرلال نہرونے کہا تھا کہ میںمسئلہ کشمیر کو اتنالٹکادوں گاکہ کشمیریوں کی تیسری نسل اس مسئلے کوبھول جائے گی ۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کی موجودہ حکومت بھی اسی اصول پر کاربند ہے لیکن کشمیریوںنے اپنی عظیم جدوجہد سے ثابت کیا کہ کشمیریوں نے کبھی مسئلہ کشمیر کو فراموش نہیں کیا۔ پروگرام کے اختتام پر مفتی محمدشفیع جوش نے شہدائے جموں اور تحریک آزادی¿ کشمیر کے دوران اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنیوالوں ‘ کشمیر کی آزادی اور پاکستان کے استحکام‘ امن اور سلامتی کیلئے دعاکروائی۔