ہائیکورٹ نے وزیر اعظم کے دورہ نیویارک کی تفصیلات طلب کر لیں

ہائیکورٹ نے وزیر اعظم کے دورہ نیویارک کی تفصیلات طلب کر لیں
 ہائیکورٹ نے وزیر اعظم کے دورہ نیویارک کی تفصیلات طلب کر لیں

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے وفاقی حکومت سے استفسار کیا ہے کہ عدالت کو بتایا جائے کہ ملک میں کوئی ایسا قانون موجود ہے جو وزیر اعظم سمیت عوامی نمائندوں کے بیرون ملک دوروں پر سرکاری خزانہ سے پیسے کے استعمال کی حد مقرر کرتا ہو، عدالت نے وزیر اعظم نواز شریف کے دورہ نیویارک کی تفصیلات دوبارہ طلب کر لی ہیں۔ وزارت خارجہ کے نمائندے کو بھی آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔ فاضل عدالت نے بیرسٹر جاوید اقبال جعفری کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار نے کہا ہے کہ وزیر اعظم اہلخانہ کے ساتھ بیرون ملک دورے کرتے ہیں جس پر سرکاری خزانے سے پیسہ خرچ کیا جاتا ہے۔ وزیراعظم کے اہل خانہ سمیت بیرون ملک دوروں پر پابندی لگائی جائے۔ وفاقی حکومت کے وکیل نے بتایا کہ درخواست گزار نے پٹیشن میں وزیراعظم کے دورہ امریکہ کی تفصیلات سے متعلق استدعا ہی نہیں کی جسکی وجہ سے وزیراعظم کے دورہ نیویارک کی تفصیلات جمع نہیں کرائی جا سکتیں جس پر فاضل جج نے کہا کہ عدالت کا فیصلہ بالکل واضح تھا عدالتی فیصلے میں تفصیلات طلب کی گئی تھیں۔ عدالت نے وفاقی حکومت کے وکیل کو ہدایت کی آئندہ سماعت پر وزیر اعظم نواز شریف کے دورہ نیویارک کی تفصیلات لازمی جمع کرائی جائیں۔ کیس کی مزید کارروائی بارہ نومبر تک ملتوی کر دی گئی ہے ۔

مزید : لاہور