عرب ممالک کے امیر ترین افراد نے جہازوں کی فرسٹ کلاس میں سفر کرنا چھوڑ دیا کیونکہ اب وہ ۔۔۔

عرب ممالک کے امیر ترین افراد نے جہازوں کی فرسٹ کلاس میں سفر کرنا چھوڑ دیا ...
عرب ممالک کے امیر ترین افراد نے جہازوں کی فرسٹ کلاس میں سفر کرنا چھوڑ دیا کیونکہ اب وہ ۔۔۔

  

ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) فرسٹ کلاس ہوائی سفر کے بارے میں سب جانتے ہیں کہ اس کے اخراجات برداشت کرنا ہر کسی کے بس میں نہیں۔ عام مسافر تو فرسٹ کلاس کے بارے میں سوچ بھی نہیں سکتے لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ مشرق وسطیٰ کے ارب پتی امراءکی بھی فرسٹ کلاس میں دلچسپی کم ہوتی جارہی ہے، لیکن اس کی وجہ بھی انتہائی دلچسپ ہے۔

نیوز سائٹ ”ایمریٹس 247“ کے مطابق ایک نئی تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ مشرق وسطیٰ کے امراءاور خصوصاً نوجوان ارب پتی شخصیات اب فرسٹ کلاس کی بجائے اپنے ذاتی جہازوں پر سفر کرنے کو ترجیح دے رہے ہیں۔ ان مالدار شخصیات نے ائیرپورٹ پر طرح طرح کے ضوابط کی پابندیوں، انتظار اور مشکلات سے بچنے کا یہ حل نکالا ہے کہ یہ اپنی قیمتی گاڑیوں پر ائیرپورٹ جاتے ہیں، اپنا سامان متعلقہ لوگوں کے حوالے کرتے ہیں اور سیدھے اپنے پرائیویٹ جیٹ میں جابیٹھتے ہیں۔ تحقیقاتی ادارے WealthX کی رپورٹ کے مطابق مشرق وسطیٰ میں اپنا ذاتی جہاز رکھنے والوں کی شرح دنیا کے دیگر حصوں کی نسبت زیادہ ہے اور ان کی اوسط عمر بھی دیگر ممالک کی ارب پتی شخصیات کی نسبت 5سال کم ہے۔ ان میں سے ہر ایک کی اوسط دولت تقریباً ایک ارب ڈالر (تقریباً 100 ارب پاکستانی روپے) ہے۔

مزید جانئے: ٹیکسی ڈرائیور کی جانب سے سوشل میڈیا پر اپنے مسافر کی ایک تصویر جس نے انٹرنیٹ پر ہنگامہ برپا کر دیا، اس میں ایسی کیا بات تھی؟ آپ بھی جانئے

مشرق وسطیٰ کے امراءکے پرائیویٹ جہازوں کی قیمت بھی دنیا میں دیگر جگہوں پر پائے جانے والے پرائیویٹ جہازوں کی نسبت تقریباً 3گنا زیادہ ہے۔ یہاں ہر پرائیویٹ جہاز کی قیمت تقریباً 5کروڑ ڈالر (تقریباً 5 ارب پاکستانی روپے) ہے۔ تحقیق کے مطابق اس سال مشرق وسطیٰ سے اڑان بھرنے والے پرائیویٹ جہازوں کی سب سے مقبول منزل ترکی رہا جبکہ اس کے بعد سب سے زیادہ پروازیں لندن اور فرانس گئیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -