یوکرینی وزیر اعظم کی بحیرہ بلقان میں دوسرے گیس پائپ لائن منصوبے پر تنقید

یوکرینی وزیر اعظم کی بحیرہ بلقان میں دوسرے گیس پائپ لائن منصوبے پر تنقید

  

ریگا (اے پی پی) یوکرین کے وزیر اعظم آرسینی یتسینیوک نے بحیرہ بلقان میں دوسرے گیس پائپ لائن منصوبے پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے یوکرین کو سالانہ 2 ارب ڈالر کا نقصان ہو گا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یوکرینی وزیراعظم نے ایسٹونیا، لٹویا اور لیتھونیا کے اپنے ہم منصبوں کے ہمراہ ایک مشترکہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ روسی کمپنی گیزپروم، اینگلو ڈچ شیل، جرمنی کی ای آن اور آسٹریلوی کمپنی او ایم وی کے درمیان ’’نارڈ سٹریم۔2‘‘ معاہدہ کے ہمسایہ ممالک پولینڈ اور سلوواکیہ کے بجٹ پر بھی منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ یوکرینی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حقیقت یہ ہے کہ اگر روس اور مغربی کمپنیاں نارڈ سٹریم۔2 منصوبہ مکمل کرتی ہیں تو اس سے یوکرین کے ریونیو میں سالانہ 2 ارب ڈالر کی کمی ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ منصوبے سے سلوواکیہ کو ریونیو میں 0.8 ارب ڈالر اور پولینڈ کو ریونیو میں 0.3 ارب ڈالر کی کمی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ انہوں نے منصوبے کو اقتصادی منصوبے سے زیادہ سیاسی قرار دیتے ہوئے یورپی یونین سے مطالبہ کیا کہ وہ اس معاملے میں سنجیدگی اختیار کرے تاکہ روس کو یورپی یونین میں توانائی کے شعبے کا کنٹرول حاصل کرنے کی اجازت نہ ہو۔

مزید :

کامرس -