حکومت 2017کے بجائے توانائی بحران کا فوری حل نکالے،میاں کامران

حکومت 2017کے بجائے توانائی بحران کا فوری حل نکالے،میاں کامران

  

لاہور(پ ر)مسلم لیگ(ق) لاہور کے جوائنٹ سیکرٹری میاں کامران سیف نے وزیراعظم پاکستان کے اس اعلان کہ 2017میں توانائی بحران کا خاتمہ ہوجائے گاکوعوام سے دھوکہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ 2017میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمہ کی بجائے عوام مسئلہ کا فوری حل چاہتے ہیں لوڈ شیڈنگ نے کاروبار زندگی تباہ کردیا ہے صنعتیں بند اور مزدور بے روزگاری کا شکار ہیں لیکن حکومت عوام کو لالی پاپ دے رہی ہے 2017ء موجودہ حکمرانوں کے اقتدار کی مدت کا آخری سال ہے عوام وعدے نہیں عملدرآمد چاہتے ہیں ۔میاں کامران سیف نے کہا کہ 6ماہ میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمہ کا نعرہ لگا کر اقتدار میں آنے والے اڑھائی سالوں میں توانائی بحران ختم نہیں کرسکے اب بھی عوام کو تاریخوں پر تاریخیں دی جارہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکمران اگر توانائی بحران کے خاتمہ میں مخلص ہیں تو فوری طور پر کالا باغ ڈیم کی تعمیر کا افتتاح کرکے کام شروع کروائیں کیونکہ کالا باغ ڈیم کی تعمیر ہی توانائی بحران کے خاتمہ کا سبب بنے گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت بجلی بحران کے عارضی حل کیلئے سستی بجلی کے ذرائع کی بجائے مہنگے ذرائع استعمال کررہی ہے جس کے باعث عوام کو انتہائی مہنگی بجلی فراہم کی جارہی ہے اور بجلی کے بلوں کی ادائیگی عوام کی پہنچ سے باہر ہوتی جارہی ہے جبکہ کالا باغ ڈیم سے3600میگا واٹ سے4000میگا واٹ اڑھائی روپے والی سستی بجلی سسٹم میں داخل ہوگی ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -