دنیا کو دھوکہ دینے کیلئے بھارت نے کشمیر یوں کیلئے اقتصادی پیکج کا اعلان کیا ،حافظ سعید

دنیا کو دھوکہ دینے کیلئے بھارت نے کشمیر یوں کیلئے اقتصادی پیکج کا اعلان کیا ...

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا کہ نریندر مودی کے دورہ کشمیر پر حریت قائدین نظربند اور ہزاروں کشمیریوں کو جیلوں میں ڈال دیا گیا ہے۔دنیا کو دھوکہ دینے کیلئے کشمیریوں کیلئے اقتصادی پیکج کے اعلانات کئے جارہے ہیں۔یہ جدوجہد آزادی کشمیر کا رخ موڑنے کی خوفناک سازشوں کا حصہ ہے۔ مودی سرکار یاد رکھے!کشمیری قوم بھارت کے کسی دھوکہ میں آنے والی نہیں ہے۔ بی جے پی کی سرپرستی میں کشمیر میں ظلم و ستم کی انتہا کر دی گئی ہے۔کشمیری قوم کا تاریخی احتجاج پوری دنیا کیلئے پیغام ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر پر غاصب بھارت کاوجود کسی صورت برداشت کرنے کیلئے تیار نہیں ہے۔جامع مسجد القادسیہ میں خطبہ جمعہ کے دوران ہزاروں افراد کے اجتماع اور بعد ازاں کارکنان و ذمہ داران کے مختلف وفود سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر کی تمام حریت پسند جماعتیں آج ہفتہ کو نریندر مودی کی کشمیر آمد کیخلاف بھرپور احتجاج کر رہی ہیں اور اس حوالہ سے ملین مارچ کا اعلان کیا گیا ہے۔بھارت سرکارنے کشمیریوں کو احتجاج میں شامل ہونے سے روکنے کیلئے پورے کشمیرکو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کرکے رکھ دیا ہے۔جگہ جگہ چھاپے مارے جارہے ہیں۔ سید علی گیلانی سمیت پوری حریت قیادت کو نظربندکر کے ان کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی لگا دی گئی ہے تاہم اس کے باوجود کشمیر ی مسلمان پرعزم ہیں اور تاریخی احتجاج کے ذریعہ اس امر کا اظہار کرنا چاہتے ہیں کہ شہداء کی سرزمین پر ہزاروں مسلمانوں کے قاتل مودی کی آمد انہیں گوارا نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ نریندر مودی کا دورہ مظلوم کشمیری مسلمانوں کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہے۔ بھارت سرکار پاکستان سے بات چیت کیلئے تیار نہیں اور حریت قیادت کو مذاکرات کی دعوت دیکر دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوشش کر رہی ہے۔ بھارتی وزیر اعظم کے دورہ کشمیرکیخلاف پوری کشمیری قوم سراپا احتجاج ہے۔کشمیریوں کا احتجاج اور شدید ردعمل دیکھ کربھارت سرکار کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ بی جے پی کی سرپرستی میں نہتے مسلمانوں کی نسل کشی کی جارہی ہے۔آٹھ لاکھ غاصب فوج نے کشمیری مسلمانوں کا جینا دوبھر کر رکھا ہے۔ ان کی عزتیں اور جان و مال سمیت کوئی چیز محفوظ نہیں ہے لیکن دوسری جانب نریندر مودی کشمیر کا دورہ کر کے ان کیلئے اقتصادی پیکج کا اعلان کرنا چاہتے ہیں۔68سال سے بھارت سرکار کے ظلم و ستم کا شکار کشمیری قوم اس کے دوہرے معیار کو بخوبی سمجھتی ہے اور وہ اس کی چانکیائی سیاست کے دھوکہ میں آنے والی نہیں ہے۔

مزید :

علاقائی -