یوم اقبال کی چھٹی منسوخ نہیں کرنی چاہیے،ر ہنما تحریک پاکستان

یوم اقبال کی چھٹی منسوخ نہیں کرنی چاہیے،ر ہنما تحریک پاکستان

  

لاہور(محمد نواز سنگرا)یوم اقبال کی چھٹی منسوخ نہیں کرنی چاہیے ۔محسنوں کو فراموش کرنے سے قوموں کی تذلیل ہوتی ہے،حکومت اگر چھٹی نہ کر ے تو تعلیمی اداروں اور دفاتر میں معمول کے کام کی بجائے یوم اقبال کے حوالے سے خصوصی پروگرام متعارف کرائے۔ان خیالات کا اظہار تحریک پاکستان کے گولڈ میڈلسٹ یافتگان نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سابق چیف جسٹس میاں محبوب احمد نے کہا کہ حکومت 9نومبر کو یوم اقبال کے حوالے سے خصوصی پروگرام تشکیل د ے ۔اگر چھٹی نہیں بھی کی جا رہی تو دفاتر اور تعلیمی اداروں میں معمول کا کام نہیں ہونا چاہیے بلکہ علامہ اقبال کے افکار اور قیام پاکستان کے حوالے سے کاوشوں کیلئے سے پروگرام ہونے چاہیں جبکہ دفاتر میں روٹین کا کام نہیں ہو نا چاہیے۔ڈاکٹر ایم اے صوفی نے کہا کہ قائد اعظم اور علامہ اقبال نہ ہوتے تو پاکستان نہ بنتا ۔علامہ اقبال نے صاف کہہ دیا تھا کہ ہندو اور مسلمان دو الگ قومیں ہیں ان کے وطن بھی الگ ہونے چاہیں۔بیگم خالد ہ منیر الدین چغتائی نے کہا کہ یوم علامہ اقبال پر چھٹی ہونی چاہیے اور واضح ہونا چاہیے کہ یوم اقبال کتنا اہم ہے ،ملک میں چھوٹی چھوٹی باتوں پر چھٹیاں کر دی جاتی ہیں تو اقبال ڈے پر کیوں نہیں۔9نومبر کی چھٹی نہ کرنا حکومت کے ماتھے پر کلنک کا ٹیکہ ہو گا اگر چھٹیوں کی تعداد کم کرنی ہے تو دیگر چھٹیوں کو کم کیا جائے لیکن یوم اقبال کی چھٹی ختم نہ کی جائے۔

مزید :

علاقائی -